تحریک انصاف اور مسلم لیگ (ق )نے ضلعی حکومتوں کے عہدیداروں کے چناؤ کیلئے خفیہ رائے شماری کی بجائے شوآف ہینڈ زکے طریقہ کارسے متعلق قانون کو ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا

تحریک انصاف اور مسلم لیگ (ق )نے ضلعی حکومتوں کے عہدیداروں کے چناؤ کیلئے خفیہ ...

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )پاکستان تحریک انصاف اور مسلم لیگ (ق )نے ضلعی حکومتوں کے عہدیداروں کے چناؤ کے لئے خفیہ رائے شماری کی بجائے شوآف ہینڈ زکے طریقہ کارسے متعلق قانون کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیاہے۔پنجاب اسمبلی میں حزب اختلاف کی دونوں جماعتوں نے لوکل گورنمنٹ ترمیمی آرڈیننس کے خلاف لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی ہے۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ ضلعی کونسلوں کی تشکیل کے لئے قوانین کے تحت خفیہ رائے شماری کرانا لازم ہے مگر لوکل گورنمنٹ ایکٹ میں شو آف ہینڈ کی ترمیم کر کے حکومت اپنے من پسند امیدواروں کو جتوا نا چاہتی ہے جو کہ حکومت پنجاب کا غیر قانونی اقدام ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیئرمین ضلع کونسل اوراور وائس چیئرمین کے انتخاب کے لئے خفیہ رائے شماری نہ کرانا آئین کے منافی ہے،آئین کے تحت کسی آزاد امیدوار کو کسی سیاسی جماعت میں شامل ہونے کے لئے مجبور نہیں کیا جاسکتا۔انتخابات کا شیڈول جاری ہونے کے بعدقانون میں کسی آرڈیننس کے ذریعے تبدیلی نہیں کی جاسکتی۔

مزید :

صفحہ آخر -