ڈپٹی چیف میکنیکل انجینئر کے ریمانڈ میں توسیع نہ کرنے پر جواب طلب

ڈپٹی چیف میکنیکل انجینئر کے ریمانڈ میں توسیع نہ کرنے پر جواب طلب

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کی جسٹس ارشاد قیصراورجسٹس مس مسرت ہلالی پرمشتمل دورکنی بنچ نے احتساب عدالت کی جانب سے لوکوموٹوفیکٹری کے ڈپٹی چیف مکینکل انجینئرفیاض علی شاہ کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع نہ کرنے کے خلاف دائررٹ پراحتساب عدالت اورفیاض علی شاہ سے جواب مانگ لیاہے فاضل بنچ نے گذشتہ روز قومی احتساب بیورو خیبرپختونخواکی رٹ کی سماعت کی اس موقع پر نیب کے پراسیکیوٹرعظیم داد نے عدالت کو بتایاکہ قومی احتساب بیورو نے 20اکتوبر2015ء کو لوکوموٹوفیکٹری کے ڈپٹی چیف مکینکل انجینئرفیاض علی شاہ کوگرفتارکیاتھا اوراگلے روز احتساب عدالت میں پیش کرکے سات روزہ جسمانی ریمانڈ لیاتھا تاہم سات روز مکمل ہونے پر جب ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کرنے کے لئے درخواست دی تاہم احتساب عدالت نے ملزم کے ریمانڈ میں توسیع کرنے سے انکارکرتے ہوئے حفاظتی تحویل پرجیل بھجوادیا تاہم احتساب عدالت کے پاس یہ اختیار نہیں کہ وہ ملزم کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع سے انکار کرے اوراحتساب عدالت کے حکمنامے کو کالعدم قرار دیا جائے فاضل بنچ نے ابتدائی دلائل کے بعد احتساب عدالت اورملزم کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب مانگ لیا۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -