الیکشن ٹربیونل کافیصلہ کالعدم قرار، سپریم کورٹ نے پی ایس 23میں دوبارہ انتخابات کا حکم دیدیا

الیکشن ٹربیونل کافیصلہ کالعدم قرار، سپریم کورٹ نے پی ایس 23میں دوبارہ ...
الیکشن ٹربیونل کافیصلہ کالعدم قرار، سپریم کورٹ نے پی ایس 23میں دوبارہ انتخابات کا حکم دیدیا

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ کالعدم قراردیتے ہوئے پی ایس 23نوشیروفیروز میں دوبارہ انتخابات کا حکم دیدیاہے اور کامیاب امیدوار مسرور احمد جتوئی کو ڈی سیٹ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق عام انتخابات میں جعلی ووٹوں کے کاسٹ ہونے کو بنیاد بناکر پیپلزپارٹی کے امیدوار فیروز جمالی نے مسرور احمد کی کامیابی کو چیلنج کرتے ہوئے الیکشن ٹربیونل میں استدعا کی تھی کہ کچھ ووٹوں کی نادرا سے تصدیق کرائی جائے ۔ الیکشن ٹربیونل نے ابتدائی سماعت کے بعد درخواست کو ناقابل سماعت قراردیتے ہوئے خارج کردیاتھاجس پر فیروز جمالی نے سپریم کورٹ سے رجوع کرلیاجہاں جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا تھا اور منگل کومختصر فیصلہ سنادیا۔ عدالت نے الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ کالعدم قراردیتے ہوئے سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 23نوشیروفیروز میں دوبارہ انتخابات کرانے کاحکم دیدیا۔

مزید :

اسلام آباد -اہم خبریں -