دنیا کا وہ واحد شرمناک پیشہ جس میں خواتین کی آمدنی مردوں سے کئی گنا زیادہ ہوتی ہے

دنیا کا وہ واحد شرمناک پیشہ جس میں خواتین کی آمدنی مردوں سے کئی گنا زیادہ ...
دنیا کا وہ واحد شرمناک پیشہ جس میں خواتین کی آمدنی مردوں سے کئی گنا زیادہ ہوتی ہے

  

لاس اینجلس(نیوز ڈیسک)امریکا اور یورپ میں ہزاروں لاکھوں کی تعداد میں تیار ہونیوالی فحش فلموں کا زہر دنیا کے ہر کونے تک پہنچ چکا ہے۔ اس حیاسوز انڈسٹری کے اکثر پہلو راز رکھے جاتے ہیں، لیکن امریکی نشریاتی ادارے سی این بی سی نے پہلی دفعہ درجنوں فحش اداکاروں اور اداکاراﺅں سے تفصیلی بات چیت کی ہے تاکہ پتہ چلایا جا سکے کہ آخر کتنی دولت کے عوض یہ لوگ بے حیائی کی تمام حدوں کو پھلانگنے کیلئے تیار ہوجاتے ہیں۔

اخبار ’ڈیلی سٹار‘ کے مطابق عام فلم انڈسٹری کے برعکس فحش انڈسٹری میں خواتین مردوں کی نسبت کہیں زیادہ کماتی ہیں۔ ان میں سے بہت مشہور اور مقبول ہوجانے والی خواتین سالانہ لاکھوں ڈالر تک کما سکتی ہیں۔ ایک فلم سٹوڈیوکے مالک نے بتایا کہ ایک سین کے بدلے ایک عام فحش فلم سٹار 600 سے 700پاﺅنڈ ( اوسطاً 75 ہزار روپے) کما لیتی ہے، جبکہ زیادہ غلیظ اور شدت پسندی پر مبنی مناظر کیلئے ان کی فی سین کمائی 1200 سے 1800 پاﺅنڈ (اوسطاً 2 لاکھ روپے) تک چلی جاتی ہے۔

خواتین کو مختلف اقسام اور انداز کے مناظر کے حساب سے کم یا زیادہ رقم دی جاتی ہے، البتہ مر د فحش اداکاروں کو یومیہ یا فی سین کے حساب سے طے شدہ رقم دی جاتی ہے۔ مرد اداکارعموماً فی سین 300 سے 400 پاﺅنڈ (اوسطاً 50ہزار روپے) حاصل کرتے ہیں، البتہ جو غیر معمولی شہرت اور مقبولیت رکھتے ہیں وہ 500 سے 1000 پاﺅنڈ کی توقع بھی کرسکتے ہیں۔

ان فلموں کی شوٹنگ دو دن سے ایک ہفتے کے دوران مکمل کی جاتی ہے، اور اس دوران کیمرے کے سامنے پرفارم کرنے والے اداکاروں کے ساتھ دیگر عملے کی بڑی تعداد بھی موجود ہوتی ہے۔ ڈائریکٹروں کو عموماً 500 سے 1000 پاﺅنڈ (اوسطاً ایک لاکھ روپے) یومیہ دیئے جاتے ہیں، جبکہ میک اپ آرٹسٹ اور سٹل فوٹوگرافر300 سے 400 پاﺅنڈ یومیہ کماپاتے ہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -