بھارت کا یوم جمہوریہ ، کشمیری عوام آج ’’یوم سیاہ‘‘منائینگے ، مقبوضہ وادی میں سکیورٹی سخت ، بھاری نفری تعینات

بھارت کا یوم جمہوریہ ، کشمیری عوام آج ’’یوم سیاہ‘‘منائینگے ، مقبوضہ وادی ...

  



سرینگر (این این آئی)کنٹرول لائن کے دونوں جانب اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری(آج) 26جنوری بروزہفتہ بھارت کا یوم جمہوریہ یوم سیاہ کے طور پر منائیں گے۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق یوم سیاہ منانے کی کال سید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے د ی ہے تاکہ عالمی برادری کوباورکرایا جاسکے بھارت کشمیریوں کو ان کا ناقابل تنسیخ حق، حق خود ارادیت دینے سے مسلسل انکار کر رہا ہے۔ آج مقبوضہ کشمیرمیں مکمل ہڑتال کی جائے گی اور دنیا بھر کے دارلحکومتوں میں بھارت مخالف مظاہرے اور ریلیاں منعقد کی جائیں گی۔ سیدعلی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق ،محمد یاسین ملک اور دیگر حریت رہنماؤں نے اپنے بیانات میں کہاہے کہ بھارت کے پاس جموں وکشمیر میں اپنایوم جمہوریہ منانے کا کوئی قانونی ، آئینی یا اخلاقی جواز نہیں کیونکہ اس نے جموں کشمیر پر کشمیریوں کی خواہشات کے بر خلاف غیر قانونی طورپر قبضہ کر رکھا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ہر سال 26جنوری کشمیریوں کیلئے مشکلات کا باعث بنتا ہے جنہیں نام نہاد سیکورٹی کے اقداما ت کے نام پر جامہ تلاشیوں اور چیکنگ کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔انہوں نے لوگوں اورطلباء سے کہاکہ وہ یوم جمہوریہ کی تمام تقاریب کا بائیکاٹ کریں۔دریں اثنا بھارتی فورسز نے یوم جمہوریہ کی تقریبات سے قبل مقبوضہ علاقے کے اطراف و اکناف خاص طور پر سرینگر اور دیگربڑے قصبوں میں سیکورٹی سخت کر دی ہے اور بھارتی فوجیوں اورپولیس اہلکاروں کی ایک بڑی تعدادکو تعینات کیا گیا ہے ۔ گھروں پر چھاپے مارے جارہے ہیں اور راہگیروں کی جامہ تلاشی لی جا رہی ہے ۔ کئی حریت رہنماؤں اور کارکنوں سمیت عام نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد کو کل بھارت مخالف مظاہروں سے روکنے کیلئے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

یوم سیاہ

مزید : صفحہ اول