قانون سازی کیساتھ ساتھ پولیس کی نفسیاتی واخلاقی تربیت بھی ہونی چاہئے

قانون سازی کیساتھ ساتھ پولیس کی نفسیاتی واخلاقی تربیت بھی ہونی چاہئے

  



سابق آئی جی پولیس طاہر عالم نے کہا ہے کہ پولیس کو گولی مارنے کااختیار نہیں ہے پولیس کی جانب سے سانحہ ساہیوال کو مس ہینڈل کیا گیا اور اس میں انتہائی غیر ذمے داری کی وجہ سے اس ایشو کو ایک سانحہ بننے کا موقع ملا اگر پولیس اس کو روائتی طور پر ہینڈل کرتی اور قانون کو ہاتھ میں لینے کی بجائے ذمے داری کا مظاہرہ کرتی تو آج کسی کو بھی انگلیاں اٹھانے کا موقع نہ ملتا ۔ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جی میں متفق ہوں کہ پولیس اصلاحات ہونی چاہئے قانون سازی کے ساتھ ساتھ اخلاقی تربیت بھی ہونی چاہئے اور اس طرح کا سسٹم ہونا چاہئے کہ نفرت جرم سے کیا جائے کسی انسان کے ساتھ نہیں اس طرح کی سائیکالوجی تربیت بھی ہونی چاہئے کہ پولیس انتہائی اقدام پر مجبور ہی نہ ہو ۔

طاہر عالم

مزید : صفحہ اول