وزیر اعظم نے ثقافتی ورثے اور سیاحت کے فروغ کیلئے پروگرام منعقد ۱کرنے کی منظوری دیدی

وزیر اعظم نے ثقافتی ورثے اور سیاحت کے فروغ کیلئے پروگرام منعقد ۱کرنے کی ...

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وزیراعظم نے ثقافتی ورثے اورسیاحت کے فروغ کیلئے پروگرام منعقد کرنے کی منظوری دیدی۔وزیراعظم کے وژن کے مطابق پاکستان کے ثقافتی ورثے اور سیاحتی پوٹینشل کو اجاگر کرنے اور اس سلسلے میں آئندہ ایک سال میں ملک بھر میں مختلف تقریبات کے انعقاد کے حوالے سے وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اعلی سطحی اجلاس منعقد ہوا ۔اجلاس میں وزیر اطلاعات چودھری فواد حسین، سیکرٹری اطلاعات شفقت جلیل، ایگزیکٹو ڈائریکٹر لوک ورثہ شاہدہ شاہد، سابق سیکرٹری کامران لاشاری اور دیگر افسران نے شرکت کی ۔اجلاس میں میلہ چراغاں، گلگت بلتستان فیسٹیول، قوالی فیسٹیول، صوفیاء کرام کے عرس، شندور پولو فیسٹیول، پاکستان کلچرل کارنیول، فلم فیسٹیول، فوک فیسٹیول، جشنِ اقبال، کرتارپورہ فیسٹیول، چولستان جیپ ریلی، فوڈ اینڈ میوزک فیسٹیول اور پاکستان کے مایہ ناز گلوکاروں کو خراجِ تحسین پیش کرنے کے سلسلے میں مختلف محفلوں کا انعقاد جیسے پروگرامز کا مجوزہ شیڈول وزیراعظم کو پیش کیا گیا ۔وزیر اعظم نے پروگرام کو سراہتے ہوئے کہا کہ یہ پروگرام پاکستان میں سیاحت کے فروغ میں ایک سنگ میل ثابت ہوگا۔اجلاس میں ملک کے طول و ارض میں موجود کثیر جہتی ثقافتی، مذہبی و تاریخی ورثے کو اجاگر کرنے کیلئے آئندہ ایک سال کے عرصے میں مختلف ایونٹس، تقریبات، میلوں اور ادبی محفلوں پر مشتمل پروگراموں کی منظوری دی گئی۔ ان تقریبات کے انعقاد کا مقصد ارض پاکستان کے 3ہزار سالہ ثقافتی اور تاریخی ورثے اور ملک کے تنوع اور ثقافتی جامعیت کو اجاگر کرنا اورایک عرصے سے مشکلات سے دوچار پاکستانی عوام کو معیاری تفریح کے مواقع فراہم کرنا ہے۔ تقریبات کا اہم مقصد نوجوان نسل کو قومی ورثے سے متعارف کراتے ہوئے پاکستانیت کو اجاگر کرنا ہے۔ ان ایونٹس میں مختلف شعبہ ہائے زندگی اور ہر عمر سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی شمولیت کو یقینی بنانے کیساتھ ساتھ ان علاقوں پر خصوصی توجہ دی جائیگی جو دور افتادہ اور ماضی میں عدم توجہ کا شکارہونے کی وجہ سے ملک کے دیگر حصوں سے پیچھے رہ گئے ہیں۔ تقریبات کا انعقاد مرکز، صوبائی حکومتوں اور ضلعی سطح پرکیا جائیگا۔دریں اثناء وزیر اعظم عمران خان کے زیرصدارت اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ این ٹی ڈی سی، سی پی پی اے اور انرجی سے متعلقہ تمام وفاقی اداروں میں صوبائی نمائندگی یقینی بنانے کیساتھ ساتھصوبوں کے درمیان نیٹ ہائیڈل پرافٹس اور اے جی این قاضی فارمولے سے متعلقہ معاملات کے حل کیلئے کمیٹی کے قیام کا فیصلہ بھی کیا گیا، کمیٹی آئندہ ایک ہفتے میں مستقبل کے لائحہ عمل کے لئے سفارشات پیش کرے گی۔اجلاس میں وزیر خزانہ اسد عمر، وزیر برائے پٹرولیم غلام سرور خان، وزیر برائے توانائی عمر ایوب خان ، وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان، چیئرمین ٹاسک فورس برائے انرجی ندیم بابر، مشیر وزیر اعلی خیبر پختونخوا حمایت اللہ سمیت سینئر افسران نے شرکت کی ۔ اجلاس میں صوبہ خیبر پختونخوا میں تیل اور گیس کی پیداوار، بجلی بنانے کے مختلف منصوبوں پر پیش رفت اور انرجی سے متعلقہ مختلف ایشوز پر بات چیت کی گئی ۔ وزیرِ توانائی عمر ایوب کی جانب سے پیسکو ریجن میں بجلی کے ترسیلی نظام کی تنظیم نو کرنے اور اسے جدید ٹیکنالوجی سے آراستہ کرنے کے لئے کیے جانے والے اقدامات پر بریفنگ دی گئی ۔ اجلاس میں پیسکو کے بورڈ کی تنظیم نو کرنے کا فیصلہ بھی کیا گیا۔ وزیرِ اعظم کو مائیکرو ہائیڈل پراجیکٹ کی تکمیل اور اس سلسلے میں پیش رفت پر بھی بریفنگ دی گئی ۔

وزیراعظم /اجلاس

مزید : صفحہ اول