ملک میں غربت ، بے روزگاری اور مہنگائی کی شرح خطرناک حد تک بڑھ چکی، امیر العظیم

ملک میں غربت ، بے روزگاری اور مہنگائی کی شرح خطرناک حد تک بڑھ چکی، امیر العظیم

  



لاہور(نمائندہ خصوصی )امیر جماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب امیر العظیم نے کہا ہے کہ ملک میں غربت ، بے روزگاری اور مہنگائی کی شرح خطرناک حد تک بڑھ چکی ہے۔سطح غربت سے نیچے زندگی گزارنے والوں کی تعداد میں دن بدن اضافہ ہورہاہے۔عوامی مسائل کم ہونے کی بجائے مسلسل بڑھ رہے ہیں۔موجودہ حکومت نے عوام کی فلاح وبہبود کے لئے کچھ نہیں بلکہ الٹاان کے مسائل میں اضافہ کرکے عوام کی زندگیوں کواجیرن بنادیا ہے۔حکمرانوں کی موجودہ معاشی پالیسیاں مکمل طورپر ناکام ہوچکی ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روزلاہور میں عوامی وفود سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف کی معاشی پالیسیوں سے عوام میں مایوسی پھیل رہی ہے۔ماضی کے حکمرانوں نے عوام کومہنگائی،بیروزگاری اور غربت کے علاوہ کچھ نہیں دیا۔اگر تحریک انصاف کی حکومت بھی ان کے نقش قدم پر چلتی رہی تو حقیقی تبدیلی کاخواب کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہوگا۔انہوں نے کہاکہ ملک میں معاشی بحران سنگین شکل اختیار کرتاجارہا ہے۔تحریک انصاف کی حکومت کے صرف چھ ماہ میں ہی عوام کاجینا دوبھر ہوگیا ہے۔مہنگائی بڑھنے سے لوگوں کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے۔حکومت کو چاہئے کہ وہ ایسی معاشی پالیسی بنائے کہ جس سے مہنگائی میں کمی ہوسکے اورعام آدمی کوریلیف مل سکے۔انہوں نے کہاکہ مہنگائی،بے روزگاری،دہشتگردی،لاقانونیت اورکرپشن جیسے بڑے مسائل کسی اژدھاکی مانند منہ کھولے کھڑے ہیں۔ملک میں کرپشن کے آئے روز نت نئے اسکینڈلز سامنے آرہے ہیں۔کرپٹ عناصر نے ملک کی معاشی بنیادوں کو ہلاکر رکھ دیا ہے جبکہ انسداد کرپشن کے نیب سمیت دیگر تمام ادارے ملک سے کرپشن کاقلع قمع کرنے میں بری طرح ناکام ثابت ہوئے ہیں۔امیر العظیم نے مزیدکہاکہ پاکستان کی پائیدار ترقی کے لیے شرح نمو بڑھانے اور بے روزگارنوجوانوں کے لیے روزگار اور آگے بڑھنے کے نئے موقع پیداکرنے کی ضرورت ہے۔معاشی ترقی کے لیے حکمرانوں کو سنجیدگی کامظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4