قلم کے ذریعے نفرتوں کے بیج بونے سے ملک کو نقصان ہو گا : ثمر ہارون بلور

قلم کے ذریعے نفرتوں کے بیج بونے سے ملک کو نقصان ہو گا : ثمر ہارون بلور

پشاور (سٹی رپورٹر ) عوامی نیشنل پارٹی کی رہنمااور رکن صوبائی اسمبلی ثمر ہارون بلور نے معروف انگریزی جریدے میں نسلی امتیاز پر مبنی مضمون پر انتہائی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ صحافت ایک مقدس پیشہ ہے اور ملک میں بسنے والی قومیتوں کو نسلی بنیاد پر تقسیم کرنے جیسے الفاظ سے ملک کی یکجہتی کو نقصان پہنچ سکتا ہے اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ مضمون سے یہ تاثر دیا جا رہا ہے کہ ساہیوال میں مارے جانے والے اگر پختون ہوتے تو کوئی بات نہیں تھی ، انہوں نے کہا کہ ساہیوال کا واقعہ بلا شبہ دردناک ہے تاہم اس پر پوانٹ سکورنگ اور قومیتوں کے درمیان نفرتوں کے بیج بونے سے ملک کو نقصان ہو گا ، ثمر ہارون بلور نے کہا کہ پختونوں نے دہشتگردی کے خلاف جان و مال کی جو قربانیاں دی ہیں وہ تاریخ کا انمٹ باب ہیں ، اور ہمارے صوبے نے دہشتگردی کے خلاف فرنٹ لائن کا کردار ادا کیا، انہوں نے کہا کہ ہمیں ان قربانیوں کا سرٹیفیکیٹ لینے کی ضرورت نہیں کیونکہ دنیا ان کی معترف ہے تاہم کالم لکھنے والوں کو زیب نہیں دیتا کہ وہ اپنے قلم سے پختونوں کو دہشتگرد بنا کر پیش کریں ، انہوں نے کہا کہ ان الفاظ سے دلی صدمہ پہنچا ہے اور یہ ان کی ذہنی پستی کی عکاسی کرتا ہے۔ثمر بلور نے مزید کہا کہ پختون دہشت گرد نہیں بلکہ دہشت گردی پختونوں پر جبری طور پر مسلط کی گئی ہے اور مخصوص مفادات کی خاطر پختونوں کو جنگ کا ایندھن بنایا گیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر