گیس کی شدید قلت سے گھریلوصافین بلبلا اٹھے، متعلقہ ادارے خاموش

گیس کی شدید قلت سے گھریلوصافین بلبلا اٹھے، متعلقہ ادارے خاموش

  



لاہور( افضل افتخار)صوبائی دارلحکومت لاہور میں گیس کی قلت نے شہریوں کی چیخیں نکال دی مہنگائی کے اس دور میں لوگوں کے لئے بازار سے سلنڈرز پر گیس بھروانا اور کھانا لینا مشکل ہوگیا ملک بھر میں اس وقت گیس کی شدید قلت ہے جس کا نوٹس وزیر اعظم پاکستان عمران خان بھی لے چکے ہیں مگر ان کے نوٹس کے باوجود گیس کی قلت کے حوالے سے مسائل جوں کے توں ہیں جو ہی سردی میں تھوڑا اضافہ ہوتا ہے کہ بارش ہو اس کیساتھ ہی گیس کی شدید قلت کاسلسلہ شروع ہوجاتا ہے گیس نہ ہونے سے جہاں پر گھریلوصارفین کو شدید مشکلات درپیش ہیں ان کے ساتھ ساتھ ملک میں سی این جی اسٹیشنز کے مالکان اور کاروبار بھی بہت متاثر ہورہا ہے ذرائع کے مطابق ملک میں گیس کی پیداوار کے حوالے سے اب تک کوئی رپورٹ سامنے نہیں آئی اور نہ ہی اس حوالے سے حکومت کوئی اعداد و شمار دے رہی ہے کہ کتنی قلت ہے ا۔ اس حوالے سے ترجمان ایس این جی پی ایل کے مطابق جلد ہی بحران پر قابو پالیا جائے گا پی ایس او اور پی ایل ایل کے این جی کے کارگو لنگر انداز ہوگئے ہیں اور پہلی مرتبہ ایسا ہوا کہ ایک ساتھ دو کارگو بیک وقت لنگر انداز ہوئے ایل این جی کی سپلائی ایس این جی ایل پی کو جلد شروع ہوجائے گی جس سے ملک میں گیس کے بحران پر قابو پانے میں مدد ملے گی دوسری طرف گیس چوری کرنے والے بھی اس بحران کے ذمہ دار ہیں جن کے خلاف ہم نے کریک ڈاؤن شروع کردیا ہے اور ان کے گیس کنکشن بھی منقطع کررہے ہیں اور اس کاروائی سے بھی ملک میں گیس کی قلت دور ہوگی امید ہے کہ تمام مسائل پر جلد قابو پالیا جائے گا اور موسم کی بہتری کے ساتھ بھی گیس کی فراہمی میں خاطر خواہ بہتری نظر آئے گی کیونکہ سردیوں میں گیس کا استعمال بہت بڑھ جاتا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1