آنکھوں کا سپیشلسٹ اغوا کے بعد قتل، ملزمان نے لاش ایسی غلیظ ترین جگہ پھینک دی کہ پولیس کی دوڑیں لگ گئیں

آنکھوں کا سپیشلسٹ اغوا کے بعد قتل، ملزمان نے لاش ایسی غلیظ ترین جگہ پھینک دی ...
آنکھوں کا سپیشلسٹ اغوا کے بعد قتل، ملزمان نے لاش ایسی غلیظ ترین جگہ پھینک دی کہ پولیس کی دوڑیں لگ گئیں

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) 22 جنوری کو لاہور کے علاقے گلشن راوی سے اغوا ہونے والے ڈاکٹر کے قتل میں ملوث تین ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ ملزمان کے انکشاف پر سمن آباد کے گندے نالے سے ڈاکٹر وسیم کی تلاش کا کام جاری ہے۔

پولیس کے مطابق 22 جنوری کو آنکھوں کے سپیشلسٹ ڈاکٹر وسیم کو لاہور کے علاقے گلشن راوی سے اغوا کیا گیا۔ اہلخانہ کی جانب سے مقدمہ درج کرائے جانے کے بعد پولیس نے کیس کی تفتیش شروع کردی۔ پولیس نے مغوی کے موبائل فون ڈیٹا کا جائزہ لے کر تین مشکوک افراد کی نشاندہی کی اور انہیں گرفتار کرلیا۔ دوران تفتیش انکشاف ہوا کہ ڈاکٹر وسیم تینوں ملزمان کے ساتھ مل کر ڈسپنسری بنانے کا پروگرام بنا رہے تھے ۔

پولیس کا کہنا ہے کہ تینوں ملزمان نے 22 جنوری کو ڈاکٹر وسیم کو تاوان کی غرض سے اغوا کرلیا ۔ اغوا کاروں نے مقتول کے اکاؤنٹ سے بھاری رقم بھی ٹرانسفرکی جس کے بعد انہوں نے ڈاکٹر وسیم کو قتل کرنے کے بعد لاش نالے میں پھینک دی۔ ملزمان کی نشاندہی پرنالے سے لاش کی تلاش کا کام شروع کردیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور