سندھ اسمبلی کی نشست پی ایس 94 پرانتخابی دنگل سج گیا،پولنگ کل ہوگی،سیاسی جماعتوں نے کمر کس لی

سندھ اسمبلی کی نشست پی ایس 94 پرانتخابی دنگل سج گیا،پولنگ کل ہوگی،سیاسی ...
 سندھ اسمبلی کی نشست پی ایس 94 پرانتخابی دنگل سج گیا،پولنگ کل ہوگی،سیاسی جماعتوں نے کمر کس لی

  


کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)کراچی میں سندھ اسمبلی کی نشست پی ایس 94 پرانتخابی دنگل سج گیا، پولنگ کل(اتوار کو)ہوگی،ایم کیو ایم پاکستان، پی ٹی آئی، مہاجر قومی موومنٹ، پی ایس پی، پیپلز پارٹی اور ایم ایم اے سمیت مجموعی طور پر16 امیدوار میدان میں ہیں، یہ نشست ایم کیو ایم کے منتخب رکن محمد وجاہت کے انتقال کے باعث خالی ہوئی تھی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کی نشست پی ایس 94 پر ضمنی انتخاب کل(اتوار کے روز) ہو گا، پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوگی جو بغیر کسی وقفے کے شام 5 بجے تک جاری رہے گی، اس حلقے میں مجموعی ووٹرز کی تعداد 2 لاکھ 46 ہزار 449 ہے جن میں 1 لاکھ 36 ہزار 808 ووٹرز مرد اور 1 لاکھ 9 ہزار 641 خواتین ووٹرز ہیں۔ الیکشن کمیشن نے ضمنی انتخاب کے لیے 149 پولنگ سٹیشنز اور 596 پولنگ بوتھ بنائے ہیں۔ اس نشست پر ایم کیو ایم پاکستان کے سید ہاشم رضا، پی ٹی آئی کے محمد اشرف جبارقریشی، پی ایس پی کے محمد عرفان وحید، پیپلز پارٹی کے جاوید شیخ، مہاجر قومی موومنٹ کے عامر اختر، ایم ایم اے کے محمد اسلم پرویز عباسی اور پاسبان کے محمد حامد کے علاوہ9 آزاد امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوگا۔ 2018 کے عام انتخابات میں اس نشست پر ایم کیو ایم پاکستان کے محمد وجاہت نے 32 ہزار 729 ووٹ حاصل کرکے فتح حاصل کی تھی ان کے مقابلے پر ٹی ایل پی کے امیدوار محمد شعیب الرحمن کو 14 ہزار 30، پی ٹی آئی کے فرید اللہ کو 13 ہزار 640، مہاجر قومی موومنٹ کے عارف اعظم کو 10 ہزار 828، ایم ایم اے کے محمد اسلم پرویز عباسی کو 7 ہزار 614، پی ایس پی کے امیدوار محمد عرفان کو 4 ہزار 187 اور پیپلز پارٹی کی امیدوار گل رعنا کو 2 ہزار 458 ووٹ ملے تھے۔ انتظامیہ نے اس ضمنی انتخاب کے لیے حلقے میں 1300 پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا ہے، رینجرز اہلکاروں کی تعداد اس کے علاوہ ہوگی جو پولنگ اسٹیشنز اور علاقوں میں موجود رہیں گے۔ الیکشن کمیشن کے مطابق ووٹ ڈالنے کے لیے شناختی کارڈ لازمی لانا ہوگا، زائد المعیاد شناختی کارڈ بھی قابل قبول ہوگا، ووٹرز کو موبائل فون پولنگ سٹیشن کے اندر لانے کی اجازت نہیں ہوگی۔ پولنگ کے لیے الیکشن کمیشن نے 2 ہزار سے زائد انتخابی عملہ مقرر کیا ہے۔ یہ حلقہ لانڈھی سب ڈویژن کے بیشتر علاقوں میں مشتمل ہے ،جن میں کرسچن کالونی، خضر آباد، سرفراز کالونی، بھٹو نگر، ایریا 37 بی، جام نگر، کچی آبادی، بہادر یار جنگ کالونی، خرم آباد، لانڈھی نمبر 2،5،6، خواجہ اجمیر، عثمانیہ کالونی، شاہ خالد کالونی، برمی کالونی، شریف کالونی، کورنگی 35 بی، کورنگی 36 سی ایریا، کورنگی نمبر 6 اور دیگر علاقے شامل ہیں۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی