ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کے اہلکاروں کی جانب سے شہریوں کو اغوا کیے جانے کا انکشاف، طریقہ واردات کیا اپناتے تھے؟ پریشان کن خبر آگئی

ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کے اہلکاروں کی جانب سے شہریوں کو اغوا کیے جانے کا ...
ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کے اہلکاروں کی جانب سے شہریوں کو اغوا کیے جانے کا انکشاف، طریقہ واردات کیا اپناتے تھے؟ پریشان کن خبر آگئی

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کے اہلکار ہی سائبرجرائم میں ملوث نکلے ۔ پولیس نے اغوا برائے تاوان کی وارداتوں میں ملوث ایف آئی اے اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔

نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا کہ ایف آئی اے کے افسران اور اہلکاروں پر مشتمل اغوا برائے تاوان کے گروہ کا انکشاف ہوا ہے۔ اس گروہ میں سب انسپکٹر آصف حسین، ہیڈکانسٹیبل ارشداورنعیم اختر شامل تھے جبکہ انہیں ایف آئی اے کے بعض اعلیٰ افسران کی پشت پناہی بھی حاصل تھی۔

ذرائع نے بتایا کہ ایف آئی اے سائبر کرائم کے اہلکار کسی شخص کے خلاف شکایت موصول ہونے پر مذکورہ شخص کے گھر چھاپہ مار کر اسے گرفتار کرتے اور آنکھوں پر پٹیاں باندھ کرگاڑی میں بٹھالیتے۔ اہلکار مغوی کو سڑکوں پرگھماتے رہتے اور لواحقین سے تاوان طلب کرتے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اہلکاروں نے 2 وارداتوں میں 15 لاکھ 80 ہزار روپے بطور تاوان وصول کیا۔ پولیس نے ایف آئی اے اہلکاروں کے خلاف اغواکامقدمہ درج کرلیا ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد