پاکستان اور بھارت کے درمیان آپریشنل رابطے جاری ،مذاکرات سے قبل اعتماد کی بحالی ناگزیر ہے:بھارتی ہائی کمشنر اجے بساریہ

پاکستان اور بھارت کے درمیان آپریشنل رابطے جاری ،مذاکرات سے قبل اعتماد کی ...
پاکستان اور بھارت کے درمیان آپریشنل رابطے جاری ،مذاکرات سے قبل اعتماد کی بحالی ناگزیر ہے:بھارتی ہائی کمشنر اجے بساریہ

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت کے ہائی کمشنر اجے بساریہ نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان آپریشنل رابطے جاری ہیں، کرتار پور راہداری کے لیے بھارتی جوائنٹ سیکریٹری کو فوکل پرسن بنا دیا گیا ہے، راہداری نے رواں سال نومبر میں آپریشنل ہونا ہے،کرتار پور کے لیے زیروپوائنٹ پر اتفاق رائے ہونا ہے ،سیاسی مذاکرات سے قبل اعتماد کی بحالی ناگزیر ہے۔

نجی ٹی وی چینل ’’جیو نیوز‘‘ کے مطابق بھارتی یوم جمہوریہ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ہندوستانی ہائی کمشنر اجے بساریہ  کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان آپریشنل رابطے جاری ہیں، سیاسی مذاکرات سے قبل اعتماد کی بحالی ناگزیر ہے،تاہم بھارت میں انتخابات کے باعث فی الحال سیاسی روابط مشکل ہیں۔ بھارت کے ہائی کمشنر نے بتایا کہ کرتار پور راہداری کے لیے بھارتی جوائنٹ سیکریٹری کو فوکل پرسن بنا دیا گیا ہے، واٹر کمیشن کا پاکستانی وفد کل  اتوار کو بھارت کا دورہ کرے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ کرتارپور کے حوالے سے کئی ملاقاتیں ہونی ہیں، کرتار پور راہداری نے رواں سال نومبر میں آپریشنل ہونا ہے،کرتار پور کے لیے زیروپوائنٹ پر اتفاق رائے ہونا ہے۔بھارت کے ہائی کمشنر نے کہا کہ کرتار پور راہداری کے بنیادی نکات پر اتفاق موجود ہے، دونوں ممالک کے درمیان کرتار پور کے معاملے پر روابط ہیں۔بھارتی ہائی کمشنر اجے بساریہ نے کہا کہ ملاقات کی تاریخ چھوٹا معاملہ ہے جو جلد حل ہوجائے گا، کرتار پور کے حوالے سے کئی ملاقاتیں ہونی ہیں۔واضح رہے کہ گذشتہ سال ستمبر 2018 کے پہلے ہفتہ میں کولکتہ میں لیکچر دیتے ہوئے پاکستان میں بھارت کے ہائی کمشنر اجے بساریہ نے کہا تھا کہ نئی پاکستانی حکومت نے سیاسی کھڑکی کھولی ہے، بھارت کا رویہ بہت محتاط ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارت نے محتاط توقعات وابستہ کر رکھی ہیں۔ غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے مطابق ان کا کہنا تھا کہ بھارتی حکومت کو امید ہے کہ بین الاقوامی سرحدوں پر سیز فائر برقرار رہے گی جو دو طرفہ بات چیت شروع کرنے کے لیے ضروری ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد