18 ویں ترمیم چھیڑنے سے مزید مسائل پیدا ہونگے، بلوچستان کے حقوق کا دفاع ہر صورت کریں گے:نواب اسلم رئیسانی

18 ویں ترمیم چھیڑنے سے مزید مسائل پیدا ہونگے، بلوچستان کے حقوق کا دفاع ہر صورت ...
18 ویں ترمیم چھیڑنے سے مزید مسائل پیدا ہونگے، بلوچستان کے حقوق کا دفاع ہر صورت کریں گے:نواب اسلم رئیسانی

  



کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آ ن لائن) سابق وزیراعلیٰ بلوچستان و رکن صوبائی اسمبلی نواب اسلم رئیسانی نے کہا ہے کہ 18 ویں ترمیم چھیڑنے سے مزید مسائل پیدا ہونگے ،بلوچستان کے حقوق کا دفاع کر صورت میں کریں گے ،اگر بلوچستان کے وسائل پر انہیں اختیار نہیں دیا گیا تو مستقبل میں حالات مزید گھمبیر ہو سکتے ہیں، ہم نے ہمیشہ سیاست نظریہ کے لئے کی ہے۔

 نجی ٹی وی چینل سے گفتگو  کرتے ہوئے نواب اسلم رئیسانی نے کہا کہ تبدیلی لانے والی حکومت کو ملک کے مسائل پر توجہ دینے کی ضرورت ہے، نئے پاکستان میں حالات دن بدن گھمبیر ہوتے جارہے ہیں، ساہیوال واقعہ ہو یا دیگر واقعات ؟ان میں ملوث ملزمان کو کیفرکردار تک نہیں پہنچایا گیا تو لوگ حکومت پر شک وشبہات کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے ہمیشہ نظریے کے لئے سیاست کی ہے، مفادات کی سیاست پہلے بھی نہیں کی آئندہ بھی نہیں کریں گے، ہم جمہوری سوچ رکھتے ہیں جس کے لئے ہم ہر قربانی دینے کے لئے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ 18 ویں ترمیم سے ہی صوبوں کو اختیارات ملے ہیں ،اگر 18 ویں ترمیم کو ختم کرنے کی کوشش کی تو اس کے خطرناک نتائج برآمد ہونگے، اسلام آباد والوں سے پوچھا جائے کہ وہ کیوں 18 ویں ترمیم کو ختم کرنے پر تلے ہوئے ہیں؟۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے حقوق کے لئے میدان میں نکلے ہیں، اگر ہمارے حقوق کا خیال نہیں رکھا گیا تو مسائل میں مزید اضافہ ہوگا، بلوچستان کو اقلیت میں کسی صورت تبدیل نہیں ہونے دیں گے ۔

مزید : علاقائی /بلوچستان /کوئٹہ