ٹیکسٹائل پالیسی کا مسودہ شیئر کیا جائے، ٹریڈرزایسوسی ایشن

ٹیکسٹائل پالیسی کا مسودہ شیئر کیا جائے، ٹریڈرزایسوسی ایشن

  



لاہور(لیڈی رپورٹر) حکومت پانچ سالہ ٹیکسٹائل پالیسی کی سفارشات کا مسودہ تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ شیئر کرے،برآمدات میں اضافے کیلئے حکومت کی پالیسیاں قابل ستائش ہیں، تمام سیکٹرز کو نہ صرف حکومت کو تھوڑا وقت دینا چاہیے بلکہ معیشت کو مشکلات سے نکالنے کیلئے جس قدر ممکن ہوسکے ساتھ بھی دیا جائے۔ ان خیالات کا اظہارٹیکسٹائل ٹر یڈرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین عبدالمنان شیخ،صدر راناندیم عباس اور سینئر نا ئب صدر سا جد حسین ملک نے ملاقات کے لئے آنے والے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔رہنماؤں نے کہا کہ برآمدات میں اضافہ کئے بغیر معیشت کو سہارا نہیں دیا جا سکتا اوریہ خوش آئند ہے کہ حکومت اس جانب اپنی توجہ مرکوز کئے ہوئے ہے۔ ہمیں یہ دیکھنا چاہیے کہ ویت نام،بنگلہ دیش سمیت دیگر کئی ممالک برآمدات بڑھانے میں کیسے کامیاب ہوئے ہیں اورہمیں ان ممالک کو سٹڈی کرناچاہیے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے معیشت کی ترقی کیلئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں جس کی ستائش کرنی چاہیے تاہم جو تحفظات ہیں انہیں بھی سامنے لاناچاہیے۔ تمام سیکٹرزحکومت کو تھوڑا وقت دیں تاکہ ہیجان کی فضا نہ بنے، حکومت بھی پالیسی ساز ی میں متعلقہ شعبوں کے اسٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لے، پانچ سالہ ٹیکسٹائل پالیسی کے حوالے سے سفارشات پر مبنی مسودے کو حتمی منظور ی سے پہلے اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ شیئر کیا جائے اور اس پر تجاویز طلب کر کے انہیں بھی اس کا حصہ بنایا جائے۔ ٹیکسٹائل ٹریڈرز ایسوسی ایشن کے رہنماؤں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے ایف بی آر کے افسران او راہلکاروں کی ٹیکس دہندگان سے انٹرکشن میں کمی لائی جارہی ہے جس سے خوف و ہراس کی فضا ختم کرنے میں مدد ملے گی۔

مزید : کامرس