لنڈی کوتل، خاصہ دار فورس کے صوبیداروں اور نائب صوبیداروں ہنگامی اجلاس

  لنڈی کوتل، خاصہ دار فورس کے صوبیداروں اور نائب صوبیداروں ہنگامی اجلاس

  



خیبر (بیورورپورٹ)لنڈیکوتل میں خاصہ دار فورس کے صوبیداروں اور نائب صوبیداروں ہنگامی اجلاس منعقد ہوا اجلاس میں کئی سینئر صوبیداروں نے بھی شرکت کی اجلاس میں ریٹا ئرڈ اہلکاروں کو یکم فروری تک عہد ے چھوڑنے کا الٹی میٹم دے دیا،خاصہ دار فورس ذرائع خاصہ دار فورس ذرائع کے مطابق کہ لنڈیکوتل تحصیل خاصہ دار فورس کے صوبیداروں اور نائب صوبیداروں کا ہنگا می اجلاس منعقد ہوا اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ وہ مذید حق تلفی برادشت نہیں کرینگے کیونکہ اہم عہدوں پر ریٹائر ڈ اہلکار براجماں ہیں اور وہ اپنی مرضی کے مطابق ٹرانسفر پوسٹنگ کر رہے ہیں اور اپنے لوگ اہم چیک پوسٹوں پر تعینات کر رہے ہیں جبکہ سینئر صوبیداروں کو دور دراز علاقوں میں تعینات کر تے ہیں ذرائع نے بھی بتا یا کہ اہم عہدوں پر خاصہ دار فورس سے ریٹائر ڈ اہلکا ربراجماں ہیں جبکہ اب پولیس میں ضم ہونے کے بعد بھی ڈی ایس پیز اور ایس ایچ اوز بن گئے ہیں اس لئے ریٹائرڈ کو مذید برداشت نہیں کر سکتے اور یکم فروی تک وہ خود عہدے چھوڑ بصورت دیگر پہلے میں مرحلے ڈی پی او اور سی سی پی او سے ملاقاتیں کرینگے اسکے بعد شدید احتجاج اور عدالت سے رجوع کرینگے خاصہ دار فورس ذرائع نے بتایا کہ لنڈیکوتل میں اجلاس کے بعد جب سوشل میڈیا پر خبر شیئر ہو گئی تو جمرود تحصیل کے اور ضلع باجوڑ سے بھی صوبیداروں اور نائب صوبیداروں نے رابطے کئے اور انہوں نے بھی اپنے تحصیلوں میں ریٹائرڈ اہلکاروں کو عہدے چھوڑنے اور گھر جانے کو کہا لنڈیکوتل تحصیل اجلاس کے بعد اجلاس کی کاروائی لکھ کر ان پر ذمہ داری کیلئے تمام اہلکاروں نے دستخط بھی کر لئے تاکہ آئندہ کوئی اہلکار مکر نہ جائیں

مزید : پشاورصفحہ آخر