سانحہ کاکا صاحب اور ہوشرباء مہنگائی کیخلاف جے یو آئی کا احتجاجی مظاہرہ

سانحہ کاکا صاحب اور ہوشرباء مہنگائی کیخلاف جے یو آئی کا احتجاجی مظاہرہ

  



نوشہرہ (بیورورپورٹ) سانحہ کاکاصاحب اور کمرتوڑ مہنگائی کے خلاف جمعیت نوشہرہ کا زبردست احتجاجی مظاہرہ حکمرانوں نے ملک کا بیڑا غرق کر دیا ہے معصوم بچوں سے ذیادتی کرنے والوں کو سرعام پھانسی کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق جمعیت علماء اسلام ضلع نوشہرہ نے سانحہ کاکاصاحب اور آٹا بحران و بدترین مہنگائی کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ کیاضلعی امیر قاری محمداسلم،جنرل سیکرٹری مفتی حاکم علی حقانی،خطیب جامع مسجد قاضی خلیل الرحمٰن، الحاج پرویز خٹک 1فضل اکبرباچا، قاری قائد احمد،قاری محمد عمران، سیدمحب اللہ شاہ،ناصر خان یوسفزئی اور مفتی امتیاز علی کی قیادت میں یہ جلوس جامع مسجد سے شروع ہوکر مین بازار سے ہوتا ہوا شوبرا چوک پہنچاجلوس کے شرکاء معصوم عوض نور کے قاتلوں کو سرعام پھانسی اور بدترین مہنگائی اور موجودہ حکومت کے خلاف زبردست نعرے بازی کررہے تھے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ حکمرانوں نے ملک کو آئی ایم ایف کے ساتھ گروی رکھ دیا ہے سیلیکٹڈ وزیراعظم کو عوام کی کوئی پرواہ نہیں 2لاکھ تنخواہ پر گزارہ نہ ہونے کا کہہ کر غریب غریب مزدور طبقہ عوام کی توہین کی گئی جہانگیرترین کے اخراجات پورے کرنے کیلئے چینی کے ریٹ بڑھائے گئے جبکہ آٹے کا بحران پیدا کیا گیا انہوں نے کہا کہ امن و امان کی صورتحال بد سے بدتر ہو رہی ہے روزانہ کی بنیاد پر وارداتیں معمول بن گئے بچوں کے ساتھ ذیادتی کے واقعات میں روزبروز اضافہ ہورہا ہے زیارت کاکاصاحب کا واقعہ انتہائی افسوس ناک ہے پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس نے جو فیصلہ پرویز مشرف کے خلاف سنایا اسی کو بنیاد بنا کر معصوم عوض نور اور ان جیسے دوسری بچیوں کے قاتلوں کو سرعام پھانسی دیکر لاشوں کو ملک کی اہم چوکوں پر لٹکائیں جائیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر