زراعت پر موثر قانون سازی ناگزیر،قبائلی عوام اپنے ہی ملک میں بے گھر ہو گئے:اسد قیصر

زراعت پر موثر قانون سازی ناگزیر،قبائلی عوام اپنے ہی ملک میں بے گھر ہو ...

  



  صوابی (بیورورپورٹ)سپیکرقومی اسمبلی اسدقیصرنے کہاہے کہ دہشت گردی عفریت کے باعث ہمارا انفراسٹرکچرسبوتاژہوگیا، صنعت کونقصان پہنچا،وارآن ٹیررکی وجہ سے خیبرپختونخواکوکافی نقصان ہوا،صوبے کاکوئی ضلع دہشت گردی کی عفریت سے محفوظ نہیں رہا،قبائلی عوام اپنے ہی ملک میں بے گھرہوگئے۔انہوں نے کہاکہ ایسے حالات میں معیشت اورکاروباری پہیہ چلانے کیلئے ہرفردکواس وطن عزیزکے چلانے اوربنانے کیلئے بھرپورکرداراداکرناہوگا،ہمیں یہ نہیں سوچناچاہے کہ پاکستان نے ہمیں کیادیابلکہ ہمیں سوچناہوگاکہ ہم نے اس مٹی کوکیادیا، سوچ،نیت،اندازاورفکرکوبدلناہوگا۔ان خیالات کااظہارانہوں نے ذراعت کے جدیدطریقوں کے ذریعے غذائی تحفظ اوربلاسود قرضوں کی تقسیم کی تقریب انعقادکے موقع پرشرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پرچیف ایگزیکٹیوپاکستان پاورٹی ایلیویشن فنڈ قاضی حمدعیسیٰ اورممبرصوبائی اسمبلی حاجی رنگیزخان بھی موجودتھے۔سپیکرقومی اسمبلی اسدقیصرنے کہاکہ مشکل حالات سے الحمداللہ نکل رہے ہیں،حالات نے وزیراعظم عمران خان کواللہ تعالیٰ نے ایک مشکل مرحلے وامتحان سے نکالاہے،وہ دن اب دورنہیں کہ جب پاکستان میں ترقی،خوشحالی اورکامیابی کاسورج طلوع ہوگا۔انہوں نے کہاکہ ذرعی زمین کے حوالے سے موثرقانون سازی وقت کااہم تقاضاہے کیونکہ ذرعی زمینیں بہت تیزی سے کم ہوتی جارہی ہیں،مستقبل میں آنے والی نسل کیلئے سوچناہوگا،کھادپرٹیکس ختم ہونے سے قیمتیں کم ہوئیں۔انہوں نے کہاکہ ذرعی زمینوں کورہائشی مقاصدکیلئے استعمال نہ کرنے کی قانون سازی کریں گے۔انہوں نے کہاکہ صوابی کے چھوٹے کاشتکاروں کی فلاح وبہوبدکیلئے 20کروڑروپے کے قرضے دیئے جارہے ہیں۔

مزید : صفحہ اول