بھارتی یوم جمہوریہ ،بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ میں کشمیرمیں مظالم اور انسانی حقوق کی پامالیوں کیخلاف احتجاجی مظاہرے

بھارتی یوم جمہوریہ ،بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ میں کشمیرمیں مظالم اور ...
بھارتی یوم جمہوریہ ،بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ میں کشمیرمیں مظالم اور انسانی حقوق کی پامالیوں کیخلاف احتجاجی مظاہرے

  



ڈھاکا(ڈیلی پاکستان آن لائن) مقبوضہ کشمیر سمیت دنیا بھر میں کشمیری آج بھارت کا 71 واں یوم جمہوریہ ’یوم سیاہ‘ کے طور پر منا رہے ہیں وہیں بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکامیں بھارت مخالف احتجاج کیا جارہا ہے،بنگلہ دیش کے اہم اورنمایاں عوامی مقامات پر بھارتی ظلم و بربریت کے پوسٹر آویزاں کردیئے گئے ہیں ۔

میڈیارپورٹس کے مطابق بھارتی کے یوم جمہوریہ پر بنگلہ دیش میں بھی عوام سڑکوں پر نکل آئے، بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ میں مقبوضہ کشمیر میں مظالم اورانسانی حقوق کی پامالیوں کےخلاف احتجاجی مظاہرے کئے جارہے ہیں ،اہم عوامی مقامات پر بھارتی ظلم وبربریت کے پوسٹر آویزاںکردیئے گئے۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر سمیت دنیا بھر میں کشمیری آج بھارت کا 71 واں یوم جمہوریہ ’یوم سیاہ‘ کے طور پر منا رہے ہیں۔قبوضہ وادی میں مودی سرکار نے گزشتہ پانچ ماہ سے غیر جمہوری اقدامات کے بعد ظلم کی انتہا کر رکھی ہے جبکہ کشمیر میں زندگی سسک رہی ہے۔دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کہلانے والے بھارت کا حقیقی چہرہ انتہائی خوفناک اور بھیانک ہے۔ بھارت کے یوم جمہوریہ کے موقع پر پوری وادی فوجی چھاؤنی میں تبدیل ہے۔قابض فوج نے جگہ جگہ محاصرہ کیا ہوا ہے تو ٹیلی فون اور انٹرنیٹ سروس بھی بند ہے۔

کشمیریوں کے احتجاج کے پیش نظر سخت چیکنگ کے ساتھ شہر کی فضائی نگرانی بھی ہو رہی ہے جبکہ بے گناہ نوجوانوں کو غائب اور انہیں شہید کرنے کا بھی سلسلہ جاری ہے۔یوم جمہوریہ کے موقع پر بے خوف کشمیری یوم سیاہ منا رہے ہیں جبکہ صرف مقبوضہ کشمیر کی بات نہیں۔ متنازعہ شہریت کے قانون نے بھارت کو تقسیم کر دیا ہے ،جگہ جگہ اس قانون کے خلاف احتجاج جاری ہے۔مسلمانوں کے علاوہ دنیا بھر میں بسنے والے سکھ بھی بھارت کے یوم جمہوریہ کو یوم سیاہ کے طور پر منا رہے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی