فیٹش کلب میں کیا کچھ ہوتا ہے؟ فحش فلموں کی اداکارہ نے پہلی بار اندر کی باتیں بتادیں

فیٹش کلب میں کیا کچھ ہوتا ہے؟ فحش فلموں کی اداکارہ نے پہلی بار اندر کی باتیں ...
فیٹش کلب میں کیا کچھ ہوتا ہے؟ فحش فلموں کی اداکارہ نے پہلی بار اندر کی باتیں بتادیں
سورس: Instagram/ shonariverofficial

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ کے سب سے بڑے فیٹش کلب میں کیا ہوتا ہے؟ فحش فلموں کی ایک اداکارہ نے پہلی بار اندر کی باتیں بتا دیں۔ ڈیلی سٹار کے مطابق شونا ریور نامی اس اداکارہ کا کہنا ہے کہ’ ’ٹارچر گارڈن نامی اس جنسی کلب میں جہاں لائیو جنسی تعلق ہوتا ہے وہیں لوگوں کو اپنے اپنے پیشے کے لحاظ سے انتہائی سخت ڈریس کوڈ کی پابندی بھی کرنی پڑتی ہے۔“ ٹارچر گارڈن نامی اس شرمناک ایونٹ کی ابتداء1990ءمیں محدود لوگوں کے لیے ہوئی تھی تاہم اب یہ برطانیہ ہی نہیں بلکہ یورپ کا سب سے بڑا فیٹش کلب بن چکا ہے جس میں نیویارک، لاس اینجلس، روم اور دیگر شہروں کے کلبوں کے لوگ بھی شرکت کرتے ہیں۔ 

شونا ریور کا کہنا ہے کہ ”جو شخص ایک بار ٹارچر گارڈن میں چلا جاتا ہے، پھر اسے کوئی اور فیٹش کلب پسند نہیں آتا۔ اس ایونٹ میں جس طرح کے ملبوسات ہوتے ہیں اور جس طرح کا ماحول ہوتا ہے، لگتا ہے جیسے یہ کسی فلم کا سین ہو۔ ایونٹ میں آپ کو بہت عمدہ میوزک سننے کو ملتا ہے اور سٹیج پر فنکار اپنے فن کا بہترین مظاہرہ کر رہے ہوتے ہیں۔ یہاں پر تشدد جنسی تعلق کے لیے الگ جگہیں ہیں اور سیکس رومز اور خونی لائیو شوزکے لیے الگ جگہیں ہوتی ہیں۔ ٹارچر گارڈن میں امیر اور غریب کا کوئی فرق نہیں ہوتا۔ اس میں انٹری فیس 40پاﺅنڈ تک ہوتی ہے اورپورے ایونٹ میں دوسرے کلبوں کے برعکس کوئی ایک بھی وی آئی پی ایریا نہیں ہوتا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -