بجلی بریک ڈاؤن اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے،جاوید قصوری

بجلی بریک ڈاؤن اداروں کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے،جاوید قصوری

  

لاہور (نمائندہ خصوصی) امیر جماعت اسلامی پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ وزیر توانائی کی جانب سے بجلی بریک ڈاؤن پربیرونی مداخلت کے خدشے کا اظہار، حکمرانوں،سائبر کرائم اور سیکورٹی اداروں کی کارکردگی پر بڑا سوالیہ نشان ہوگا۔بریک ڈاون کیوں اور کس کی غلطی کی وجہ سے ہوا، کئی گھنٹے گزرنے کے باوجود قوم کو کچھ معلوم نہیں۔معاملے کو فنی خرابی کا نام دے کر رفع دفع کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

وزیر اعظم کھوکھلے نعرے لگانے اور دکھاوے کے اقدامات کرنے کی بجائے اصل حقائق سامنے لائیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مختلف تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سیلاب متاثرین کے حوالے سے عالمی بنک کی رپورٹ تشویشناک ہے۔60لاکھ افراد غذائی عدم تحفظ کا شکار ہیں۔سیلاب سے سینکٹر وں افراد جان بحق،لاکھوں مویشی ہلاک اور 9.4ملین ایکٹر اراضی پر کھڑی فیصلیں تباہ ہوئی ہیں۔حکمرانوں نے سیلاب متاثرین کے نام پر امداد تو پوری دنیا سے مانگی مگر وہ کہاں گئی کسی کو کچھ پتا نہیں۔انہوں نے کہا کہ چند ڈالروں کے عوض پی ڈی ایم کی حکومت آئی ایم ایف کو یقینی دہائنوں میں مصروف ہے کہ آنے والے دنوں میں پاکستان کے اندر بجلی، گیس اور، پٹرول کی قیمتوں میں مزید اضافہ کیا جائے گا۔حکمرانوں نے غیر ملکی آقاوں کو خوش کرنے کے لئے پورے ملک کو عالمی اداروں کے سپرد کر دیا ہے۔ یہ غلام ابن غلام لوگ ہیں جنھوں نے اپنی تجوریاں بھرنے کے لئے پاکستان کے اندر لوٹ مار مچا رکھی ہے۔محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ پی ٹی آئی اور پی ڈی ایم دونوں ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں، ان لوگوں سے ریلیف مل سکتا ہے اور نہ ہی عوام کی زندگی میں خوشحالی آسکتی ہے۔اب وقت آگیا ہے کہ ان سے نجات حاصل کی جائے۔ملک و قوم کو اس وقت محب وطن قیادت کی ضرورت ہے جو عوام کو درپیش مسائل فوری حل کر سکے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -