اوپن مارکیٹ میں ڈالر 2روپے مہنگا، سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈیکس 700پوائنٹس بڑھ گیا

اوپن مارکیٹ میں ڈالر 2روپے مہنگا، سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈیکس 700پوائنٹس ...

  

        اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں آن لائن)ملک کی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر نے مہنگا ہونے کا سابقہ ریکارڈ ٹوٹ گیا،ایک ہی روز میں 12 روپے مہنگا ہوگیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز پاکستانی حکام کے درمیان مذاکرات میں آئی ایم ایف نے قرض بحالی پروگرام کے لیے ڈالر کو فری فلوٹ کرنے کی لازمی شرط  قرار دیا تھا،گزشتہ روز حکومت نے ڈالر کی قیمت طلب و رسد کے مطابق مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق کرنے کی اجازت دے دی تھی۔حکومت کی اجازت کے بعد  بدھ کے روز اوپن مارکیٹ میں دالر کی قیمت میں ایک دم 12 روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔اس طرح اوپن مارکیٹ میں ڈالر ملک کی تاریخ کی بلند ترین سطح 252.50 روپے پر جا پہنچا تاہم بعد میں اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت 243 روپے ہوگئی اور اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت میں 2روپے اضافہ ہوا۔ماہرین کا کہنا تھا کہ ڈالر کی قیمت مارکیٹ بیسڈ کرنے سے ترسیلات ہنڈی حوالے کے بجائے بینکنگ چینل اور اوپن مارکیٹ سے ہوں گی۔حکومت پاکستان کی جانب سے آئی ایم ایف شرائط کو تسلیم کئے جانے سے قرض کیلئے جاری مذاکرات کامیاب ہونے کی توقعات،ایکس چینجز کمپنیوں کا اوپن مارکیٹ اور انٹر بینک میں ڈالر کا کیپ ختم کرنے سے اسٹاک مارکیٹ میں نئی سرمایہ کاری آنے  اور وزیر خزانہ کی قطر میں گیس کمپنیوں سے مذاکرات کے باعث ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں اضافے کے امکانات پر بدھ کو پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں زبردست تیزی کا رجحان رہا اور کے ایس ای100انڈیکس700سے زائد پوائنٹس بڑھ گیا جس کی وجہ سے انڈیکس 39ہزار پوائنٹس سے بڑھ کر3970پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا جبکہ مارکیٹ کے سرمائے میں 93ارب روپے سے زائد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔کاروباری تیزی کی وجہ سے66.73فیصد حصص کی قیمتیں بھی بڑھ گئیں۔اسٹاک ماہرین کے مطابق آئی ایم ایف سے قرض ملنے کی صورت میں معاشی ابتری ختم ہونے کی توقعات پر لوکل انویسٹمنٹ بھی دیکھی گئی۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں بدھ کو کے ایس ای100انڈیکس میں 729.25پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے انڈیکس 39055.65پوائنٹس سے بڑھ کر39784.90پوائنٹس ہو گیا اسی طرح 311.74پوائنٹس کے اضافے سے کے ایس ای30انڈیکس 14488.48پوائنٹس سے بڑھ کر14800.22پوائنٹس پر جا پہنچا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 26294.55پوائنٹس سے بڑھ کر26690.94پوائنٹس پر بند ہوا۔کاروباری تیزی کی وجہ سے مارکیٹ کے سرمائے میں 93ارب57کروڑ88لاکھ4ہزار820روپے کا اضافہ ریکارڈکیا گیا جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 62کھرب3ارب74کروڑ52لاکھ91ہزار298روپے سے بڑھ کر62کھرب97ارب32کروڑ40لاکھ96ہزار118روپے ہو گیا۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں بد ھ کو10ارب روپے مالیت کے26کروڑ94لاکھ93ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ منگل کو6ارب روپے مالیت کے17کروڑ97لاکھ60ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ روز مجموعی طور پر 339کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے225کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،92میں کمی اور22کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔کاروبار کے لحاظ سے ورلڈ کا ل ٹیلی کام 2کروڑ6لاکھ،ٹی پی ایل پراپرٹیز 1کروڑ44لاکھ،پاک پیٹرولیم 1کروڑ32لاکھ،سوئی نادرن گیس 1کروڑ22لاکھ اور ٹی آر جی پاک لمیٹڈ 93لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے رفحا ن میض کے بھاؤ میں 485.91روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے اسکے حصص کی قیمت 8381.75روپے ہو گئی اسی طرح 76.35روپے کے اضافے سے سیفائرٹیکسٹائل کے حصص کی قیمت 1094.35روپے پر جا پہنچی جبکہ فلپ مورس پاک کے بھاؤ میں 42.72روپے کی کمی واقع ہوئی جس سے اسکے حصص کی قیمت 527.03روپے ہو گئی اسی طرح37.50روپے کی کمی سے اسلینڈ ٹیکسٹائل کے حصص کی قیمت462.50روپے پر آ گئی۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ اول -