مقامی عدالت کا جہانزیب خٹک کے غیر قانونی پریس کلب کابینہ کیخلاف حکم امتناعی 

مقامی عدالت کا جہانزیب خٹک کے غیر قانونی پریس کلب کابینہ کیخلاف حکم امتناعی 

  

نوشہرہ (بیورورپورٹ) نوشہرہ کی مقامی عدالت نے جہانزیب خٹک کے غیر قانونی پریس کلب کابینہ کے خلاف حکم امتناعی جاری کردی،اسسٹنٹ کمشنرنوشہر کا غیر قانونی نوٹیفیکیشن  بھی کالعدم، تفصیلات کے مطابق نوشہرہ پریس کلب کے صدر حافظ تفہیم الرحمان، سینئر نائب صدر سید ندیم شاہ مشوانی اور دیگر کی جانب سے ممتاز قانون دان شاہد ریاض برکی ایڈوکیٹ کے زریعے نوشہرہ میں مقامی عدالت میں دعویٰ دائر کیا، جس پر ممتاز قانون دان شاہد ریاض برکی ایڈوکیٹ نے ابتدائی  دلائل پیش کئے اور کہا کہ نوشہرہ پریس کلب ایک آئینی ادارہ ہے اور یہی ادارہ اپنی سرکاری عمارت اور اپنے آئین کے دائرے میں رہ کر انتخابات کرچکا ہے لیکن جہانزیب خٹک وغیرہ نے پریس کلب سے باہربالاخانہ اور اسلحہ کی دکان میں  خود ساختہ غیر قانی طریقہ کار سے انتخابات کئے خود کو صدر اور دیگر ساتھیوں کو کابینہ اراکین ظاہر کرکے  پریس کلب سے باہر اسسٹنٹ کمشنر نوشہرہ تنویر کے زریعے بااثرشخصیات کی اثررسوخ  پراپنی کابینہ کو غیر قانونی نوٹیفیکیشن جاری کرادیا،دلائل دیتے ہوئے شاہد ریاض برکی نے کہا کہ نوشہرہ پریس کلب کے انتخاب کے ساتھ اسسٹنٹ کمشنر یا ڈپٹی کمشنر کا کوئی کام نہیں،یہ پریس کلب امور میں مداخلت، غیر قانونی احکامات اور انجینیئرنگ  کے ذرئعے اکثریت کو اقلیت میں بلدلنے کی کوشش ہے جوکہ پریس کلب ممبران کی حق تلفی اور بنیادی حقوق صلب کرنا ہے،اسسٹنٹ کمشنر اس کام کا مجاز نہیں،نوشہرہ پریس کلب ایک آئینی ادارہ ہے اور اسکا اپنا سرکاری دفتر ہے، اور پریس کلب انتخابات سے لیکر اجلاس اور دیگر تمام امور اسی پریس کلب میں سرانجام دئے جاتے ہیں،فاضل عدالت نے شاہد ریاض برکی ایڈوکیٹ کے دلائل سنے کے بعد جہانزیب خٹک وغیرہ کی کابینہ کے خلاف حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر نوشہرہ تنویر کے غیر قانونی اقدام پر عمل درآمد  بھی روک دی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -