تم دیکھتے سنتے چلتے اور بولتے ہو ، کون سی چیز شکر بجا لانے سے روکتی ہے؟

تم دیکھتے سنتے چلتے اور بولتے ہو ، کون سی چیز شکر بجا لانے سے روکتی ہے؟
تم دیکھتے سنتے چلتے اور بولتے ہو ، کون سی چیز شکر بجا لانے سے روکتی ہے؟

  

تحریر :محمد  رفیق قائم خانی 

اندھا دنیا کو دیکھنے کی ،

بہرا سننے کی ،

لنگڑا چلنے کی ،

اور گونگا بولنے کی تمنا کرتا ہے

اور تم دیکھتے سنتے چلتے اور بولتے ہو ، تو کون سی چیز تمہیں اپنے رب کا شکر بجا لانے سے روکتی ہے؟

اللہ کے بڑے احسانوں میں سے ایک یہ بھی ہے کہ اس نے تمہیں مکمل بنایا 

تو پھر کیوں نہیں کہتے ، الحمدللہ

لوگوں کے ساتھ نیکی کرتے رہو اس انتظار میں نہیں کہ وہ تمہاری نیکی لوٹائیں گے بلکہ اس عقیدہ کے ساتھ کہ اللہ نیکی کرنے والوں کو پسند کرتا ہے.

جو لوگ اللہ کی رحمت پر آنکھ بند کر کے یقین کرتے ہیں 

جو سوال نہیں اٹھاتے 

اعتراض نہیں کرتے 

وہ کبھی اندھیرے راستوں پر ٹھوکر نہیں کھاتے

کوئی ہوتا ہے جو  انہیں سنبھال لیتا ہے 

   یا اللہ ہمیں نیکی و صلہ رحمی کرنے کی توفیق عطا فرما.

ذہنی قلبی سکون نصیب فرما.

تمام روحانی جسمانی بیماریوں سے محفوظ فرما

 آخرت میں خیر و عافیت نصیب فرما

 اور ہم سے راضی ہوجا.آمین 

مزید :

روشن کرنیں -