ٹیکسی ڈرائیور ہلاکت کیس نمٹادیاگیا، 30روز میں فیصلہ سنایاجائے: سپریم کورٹ

ٹیکسی ڈرائیور ہلاکت کیس نمٹادیاگیا، 30روز میں فیصلہ سنایاجائے: سپریم کورٹ
ٹیکسی ڈرائیور ہلاکت کیس نمٹادیاگیا، 30روز میں فیصلہ سنایاجائے: سپریم کورٹ

  


اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے کراچی میں رینجرز کے اہلکاروں کی فائرنگ سے ٹیکسی ڈرائیور کی ہلاکت پر از خود نوٹس کیس نمٹادیا اور حکم دیا ہے کہ مقدمے کا چالان داخل کر کے 30 روز کے اندر فیصلہ کیا جائے۔چیف جسٹس افتخار محمدچوہدری کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے کراچی میں رینجرز اہلکاروں کی فائرنگ سے ٹیکسی ڈرائیور کی ہلاکت پر از خود نوٹس کیس کی سماعت کی ۔ چیف جسٹس نے کہا کہ جس انداز میں ایف آئی آر درج کی گئی ، لگتا ہے کہ ملزمان کیخلاف قانون کے مطابق سختی سے نہیں نمٹا جا رہا، سرفراز شاہ اور اس کیس میں کوئی فرق نہیں، سرفراز شاہ کیس انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت درج کیا گیا، ایف آئی آر میں نقائص ہیں، خدشہ ہے کہ بیوہ دعا اور مقتول خاندان کے ساتھ انصاف نہ ہو سکے۔اٹارنی جنرل منیر اے ملک نے عدالت کو بتایا کہ ٹیکسی ڈرائیور کی بیوہ” دعا“ کو 18 لاکھ روپے کا گھر دیا گیا ہے، 10 ہزار روپے ماہانہ کی نوکری اور دو لاکھ روپے عدت کا خرچہ بھی دیا گیا ہے۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں