پاکستان حقانی نیٹ ورک کودوبارہ منظم نہ ہونے دے :امریکہ

پاکستان حقانی نیٹ ورک کودوبارہ منظم نہ ہونے دے :امریکہ
پاکستان حقانی نیٹ ورک کودوبارہ منظم نہ ہونے دے :امریکہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 واشنگٹن(ما نیٹر نگ ڈیسک)امریکہ نے ایک بار پھر پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ حقانی نیٹ ورک کو دوبارہ منظم نہ ہونے دیا جائے، پاکستانی سفیر جلیل عباس جیلانی کا کہنا تھا کہ شدت پسندوں کے خلاف آپریشن کو نتیجہ خیز بنانے کے لیے افغان سرحد سے متصل علاقوں میں مزید اقدامات کی ضرورت ہے۔ تفصیلات کے مطابق وائٹ ہاﺅس کے نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزز جنرل ریٹائرڈ جیفری ایگرز نے امریکی ریاست کولوریڈو میں ایک سیکیورٹی فورم سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ شمالی وزیرستان میں فوجی آپریشن کے باعث حقانی نیٹ ورک منتشر ہوا اور دہشت گرد علاقے سے بھاگ نکلے ہیں، پاکستان اب حقانی نیٹ ورک کو دوبارہ منظم نہ ہونے دے۔جنرل ریٹائرڈ جیفری ایگرز کامزید کہنا تھا کہ حقانی نیٹ ورک نے افغانستان میں 500 امریکی فوجی ہلاک کیے تاہم وزیرستان میں اس سے قبل ہونے والے کسی آپریشن میں اس کو ہاتھ نہیں لگایا گیا تھا۔تقریب سے خطا ب کر تے ہوئے امریکہ میں پاکستانی سفیر جلیل عباس جیلانی کا کہنا تھا کہ حقانی نیٹ ورک کے دہشت گرد آپریشن سے پہلے ہی شمالی وزیرستان سے نکل چکے تھے۔ واشنگٹن میں افغانستان کے مندوب ایکلیل حکیمی بھی تقریب میں موجود تھے۔