سانحہ ماڈل ٹاﺅن: نامزد ملزمان ایس پی سیکیورٹی، گن مین کی ضمانت میں توسیع

سانحہ ماڈل ٹاﺅن: نامزد ملزمان ایس پی سیکیورٹی، گن مین کی ضمانت میں توسیع
سانحہ ماڈل ٹاﺅن: نامزد ملزمان ایس پی سیکیورٹی، گن مین کی ضمانت میں توسیع

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن میں نامزد ملزم سابق ایس پی سیکیورٹی اور گن مین کی عبوری ضمانت میں 9 اگست تک توسیع کر دی،دوسری جانب منہاج القرآن انتظامیہ کی درخواست پر مقدمہ درج کروانے سے متعلق کیس واپس ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ کو بجھوا دیا گیا۔تفصیلات کے مطابق سانحہ ما ڈل ٹاﺅن کی سماعت انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج نے کی۔دوران سماعت سابق ایس پی سیکیورٹی سلیمان علی اور گن مین عابد کی جانب سے بتایا گیا کہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن سے ان کا کوئی تعلق نہیں ہے اور مقدمے میں ان پر لگائے گئے الزامات جھوٹے اور بے بنیاد ہیں لہٰذا ان کی عبوری ضمانت یقینی بنائی جائے۔دوران سماعت تفتیشی افسر نے موقف اختیار کیا کہ ابھی اس مقدمہ کی تفتیش مکمل نہیں ہوئی ، ہر پہلو سے اس کی تفتیش کر رہے ہیں لہٰذا مہلت دی جائے۔فاضل جج نے نامزد ملزم سابق ایس پی سیکیورٹی اور گن مین کی عبوری ضمانت میں 9اگست تک توسیع کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر تفتیش مکمل کرنے کا حکم دیدیا۔دوسری جانب ایڈیشنل سیشن جج نے منہاج القرآن انتظامیہ کی درخواست پر مقدمہ درج کروانے سے متعلق کیس واپس ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ کو بجھوا دیا۔ایڈیشنل سیشن جج لاہور صفدر بھٹی نے کیس کی سماعت شروع کی تو ادراہ منہاج القرآن کے ڈائریکٹر جواد حامد کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ سانحہ میں جاں بحق افراد کے ورثاءکی درخواست کے بجائے پولیس نے اپنی مدعیت میں ہی مقدمہ درج کر لیا ہے حالانکہ کہ قانون کے تحت ورثاءکی درخواست پر مقدمہ درج ہونا چاہئے۔ دوران سماعت جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کی جانب سے بھی رپورٹ جمع کروا دی گئی۔ ایڈیشنل سیشن ج صفدر بھٹی نے بتایا کہ میں چھٹیوں پر جا رہا ہوں، آپ کیس جج کے پاس واپس لگوالیں۔ فاضل جج نے کیس کی فائل واپس سیشن جج کو بھجوا دی۔