پکڑے جانے کا ڈر ،دہشتگرد وں نے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال ترک کر دیا

پکڑے جانے کا ڈر ،دہشتگرد وں نے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال ترک کر دیا
پکڑے جانے کا ڈر ،دہشتگرد وں نے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال ترک کر دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ویب ڈیسک) کالعدم تحریک طالبان اور ایک کالعدم تنظیم کے ارکان نے انٹیلی جنس ایجنسیوں کی جانب سے اپنے خلاف کامیاب کارروائیوں کے بعدآپس میں رابطوں کیلئے جدید ٹیکنا لوجی کا استعمال کرنے سے گریز کرنا شروع کردیاہے۔ سکیورٹی اسٹیبلشمنٹ کے ذرائع نے ”دی نیشن“ کو بتایا کہ دہشت گرد خفیہ اداروں سے بچنے کیلئے جدید ٹیکنالوجی کا محدود استعمال کر رہے ہیں۔ دہشتگرد نیٹ ورک کے غیرجانبدار ارکان نے تفتیش کاروں کو بتایا ہے کہ آپریشن ”ضرب عضب“ اور ملک کے دیگر علاقوں میں انکے ساتھیوں کیخلاف کامیاب کارروائیوں کے بعدفرار ہونیوالے بہت سے عسکریت پسندوں نے اپنے ارکان کو سٹیلائٹ فون اور موبائل فون سے رابطے کرنے سے روکدیا ہے۔ تحریک طالبان اور مفرور القاعدہ ارکان اب رابطوں کیلئے سلیپر سیلز کو استعمال کر رہے ہیں۔ ذرائع نے بتایا کہ شدت پسند اب لکھے ہوئے پیغام کے تبادلے سے بھی گریز کر رہے ہیں ۔ اسٹیبلشمنٹ کے ذرائع نے کہا کہ وہ انسانی انٹیلی جنس نیٹ ورک اور پنجاب اور ملک بھر میں موجود مخبروں پر انحصار کر رہے ہیں، اسی ہیو من انٹیلیجنس نیٹ ورک نے آپریشن ضرب عضب سے پہلے شمالی وزیرستان میں تحریک طالبان اور القاعدہ کے اڈوں کے متعلق اہم معلومات فراہم کی تھیں جس کے بعد دہشتگردوں اور انکے سلیپر سیلز کو غیرجانبدار کرنے کے کئی آپریشن کامیاب ہوئے ہیں۔

مزید :

لاہور -