بے قاعدہ زندگی کے صحت پر خوفناک اثرات

بے قاعدہ زندگی کے صحت پر خوفناک اثرات
بے قاعدہ زندگی کے صحت پر خوفناک اثرات

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

بیجنگ (نیوز ڈیسک )چینی سائنسدانوں کی تازہ تحقیق نے ثابت کیا ہے کہ شفٹوں میں اور رات کے وقت کام کرنے والوں میں صحت کے مسائل کی شرح بہت زیادہ ہو جاتی ہے اور خصوصاوہ لوگ جن کیب شفٹ مسلسل بدلتی رہتی ہے ان میں ذیابیطس ٹائپ 2(قدرے کم خطرناک ذیابطیس)کا خطرہ ایک تہائی گنا بڑھ جاتا ہے۔
یہ تحقیق ہوا ڈونگ یونیورسٹی کے پروفیسر زکسن لو اور ان کی ٹیم نے کی اور اسے سائنسی جریدے ”آکو یبیشنل اینڈ انوائرنمیٹل میڈیسن “میں شائع کیا گیا ہے۔
سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ دن کے وقت کام کرنا صحت کیلئے مفید ترین ہے رات کے وقت کام کرنے والوں کیلئے دل کی بیماریوں ،کولیسٹرول اور زیابطس کا خطرہ بڑھ جاتا ہے ،خصوصا عورتوں میں بریسٹ کینسر کی شرح میں اضافہ ہو جاتا ہے۔اسی طرح وہ لوگ جن کی شفٹ بدلتی رہتی ہے یعنی کبھی دن کے وقت ان کے وقت اور کبھی رات کے وقت ان کیلئے سب سے زیادہ خطرات پیدا ہوتے ہیں بدلتی شفٹوں والوں کیلئے ذیابطس کا خطرہ 42فیصد تک بڑھ جاتا ہے اس کے علاوہ وزن میں اضافہ ،بھوک میں اضافہ،کولیسٹرول اور بے خوابی کے مسائل بھی بڑھ جاتے ہیں۔