پاکستان سری لنکا کو شکست دیکر نیا اعزاز حاصل کرسکتا ہے

پاکستان سری لنکا کو شکست دیکر نیا اعزاز حاصل کرسکتا ہے

پاکستان اور سری لنکا کی ٹیمیں ون ڈے سیریزکے آخری ون ڈے میں آج مدمقابل آرہی ہیں پاکستان سری لنکا سر زمین پر نو سال کے بعد سیریز اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوچکی ہے لیکن اس کے باوجود ٹیم کے لئے آج بھی کامیابی حاصل کرنا بہت ضروری ہے امید ہے کہ جس طرح اب تک کھلاڑیوں نے عمدہ کھیل کا مظاہرہ کیا ہے آج کے آخری ون ڈے میں بھی اسی طرح جارحانہ کھیل پیش کرتے ہوئے کامیابی کا سہرا اپنے سر سجانے میں کامیاب ہوجائے گی کپتان اظہر علی کے لئے یہ سیریز بہت اچھی ثابت ہوئی ہے اور ان کو یہ کریڈٹ جاتا ہے کہ ان کی کپتانی میں ٹیم نے اتنے طویل عرصہ کے بعد سری لنکا کی ٹیم کو اس کی سر زمین پرشکست دی ہے سری لنکا کی ٹیم بہت مضبوط حریف ہے جس نے ہمیشہ پاکستان کو ٹف ٹائم دیا ہے اس سیریز میں پاکستان نے جس طرح باؤلنگ اور بیٹنگ کے شعبوں میں بہت ہی عمدہ پرفارمنس کا مظاہرہ کیا ہے اس کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا شائقین کے دل جیت لئے گئے ہیں آج کے میچ میں کامیابی کا پاکستان کرکٹ ٹیم کو یہ فائدہ ہوگا کہ کبھی بھی اس نے سری لنکا کواتنے بڑے مارجن سے شکست نہیں دی ہے

۔ اور اس طرح پاکستان اگر آج کا میچ جیت جاتا ہے تو اس کو ایک اور اعزاز حاصل ہوجائے گا پاکستانی ٹیم کے باؤلر یاسر شاہ نے اس سیریز میں پاکستان کی جیت میں بہت اہم کردار اداکیا ہے اور امید ہے کہ ان کی بہترین پرفارمنس کا تسلسل جاری رہے گا جس کی اشد ضرورت بھی ہے پاکستانی ٹیم نے اس سیریز میں بہت محنت سے شرکت کی اور اس کو محنت کا صلہ بھی ملا ہے آج کے میچ میں کامیابی سے پاکستان کو سر ی لنکاکے خلاف کھیلی جانے والی ٹی ٹوٹنی کرکٹ سیریز میں بھی بہت زیادہ فائدہ حاصل ہوگا اور اب دیکھنا یہ ہے کہ آج قومی کرکٹ ٹیم کس حکمت عملی کے ساتھ میدان میں اترتی ہے پاکستان کے لئے یہ میچ آسان نہیں ہے لیکن اس کے باوجود اس کو محنت سے کھیلنے کی ضرورت ہے اور اس پر کوئی دباؤ نہیں ہونا چاہئیے آج کے میچ میں پاکستان کی ٹیم فیورٹ ہے اور امید ہے کہ آج بھی لنکا کو پاکستان کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑے ۔

مزید : کالم