بہن بھائی کی لڑائی نے سیشن کورٹ کو میدان جنگ بنا دیا

بہن بھائی کی لڑائی نے سیشن کورٹ کو میدان جنگ بنا دیا

لاہور(نامہ نگار)بہن بھائی کی لڑائی نے سیشن کورٹ کو میدان جنگ بنا دیا، فریقین نے ایک دوسرے پر مکوں اور تھپڑوں کی بارش کردی،عدالت نے سماعت ملتوی کرتے ہوئے وکلاء کو 27جولائی کو طلب کرلیاہے۔ایڈیشنل سیشن جج مظہرسلیم رامے کی عدالت میں حنیف اور یوسف نے بہن سلمیٰ کے خلاف 13سالہ بیٹے ندیم کو اغوا کرنے اور اسے بازیاب کرانے کے لیے درخواست دائرکررکھی ہے۔ سلمیٰ بھی دیگر رشتے داروں کے ہمراہ سیشن کورٹ پہنچی تو بہن بھائیوں کا آمنا سامنا ہوا تو دونوں اشتعال میں آگئے اور ایک دوسرے پر حملہ کردیا۔سلمیٰ کا کہنا تھا کہ اس کا بھائی حنیف اسے بلیک میل کررہا ہے،کیوں کہ وہ اس کی شادی ایک لاکھ روپے کے عوض کسی بوڑھے شخص سے کرنا چاہتا ہے۔ شادی سے انکار کیا تو اس نے اس کے خلاف میرے ہی بیٹے کے اغوا ء کا الزام لگا دیا۔ دوسری جانب حنیف کا کہنا تھا کہ اس کا بھانجا ندیم اس کی ماں سلمیٰ نے غائب کرارکھا ہے اسے برآمد کرایا جائے۔ فریقین نے احاطہ عدالت کو میدان جنگ بنا دیا، سکیورٹی اہلکاروں نے فریقین کو سیشن کورٹ سے باہر نکال دیا

، عدالت نے آئندہ سماعت پر وکلاء کو بحث کے لئے طلب کرلیا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4