کالا باغ ڈیم ہوتا تو آج سیلاب سے تباہی نہ ہوتی،طاہر انجم

کالا باغ ڈیم ہوتا تو آج سیلاب سے تباہی نہ ہوتی،طاہر انجم

لاہور(پ۔ر)لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی کالا باغ ڈیم کمیٹی کے شریک چیئرمین اور چیئرمین قوت اخوت عوام فورم شیخ محمد طاہر انجم نے کہا ہے کہ حکمرانوں نے کالا باغ ڈیم سمیت دیگر آبی ذخائر بنائے ہوتے تو آج ملک وقوم کو بار بار سیلاب کی تباہ کاریوں کا سامنا نہ کرنا پڑتا۔ المصطفٰی ویلفیئر سوسائٹی پنجاب اور مصطفائی تحریک پاکستان کے عہدیداروں محمد گلزارفیصل ،خالد خواجہ ،محمد علی خان،اویس مصطفائی، حافظ قاسم مصطفائی،میاں شہزاد احمد، حافظ محمد مسعود، حاجی محمود انور اورمظہر سلیم حجازی سے ایک ملاقات کے دوران گفتگو کررہے تھے۔ شیخ محمد طاہر انجم کا کہنا تھا کہ دنیا کے ترقی یافتہ ممالک نے پانی کو ڈیموں کے ذریعے محفوظ بنا کر نہ صرف اپنی معاشی حالت کو بہتر بنالیابلکہ اپنی قوموں کو تباہی سے بھی بچالیا۔ لیکن پاکستان کے بدقسمت عوام گزشتہ پانچ برسوں کے دوران 4مرتبہ سیلاب کا سامنا کرچکے ہیں جس سے عوام کو اذیت ناک صورت حال کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لاکھوں لوگوں کوسیلاب کی تباہ کاریوں سے اگر کوئی چیز بچا سکتی ہے تو وہ ڈیم ہیں حکمران اور سیاسی رہنما ان ڈوبنے والے لاکھوں عوام کی فریاد سنیں اور ان کی زندگی کو بار بار تباہ ہونے سے بچائیں۔ شیخ محمدطاہر انجم نے کہا کہ ان لوگوں نے اپنے نمائندوں کو ووٹ اس لئے نہیں دیئے تھے کہ وہ اسمبلیوں میں بیٹھ کر خواب خرگوش کے مزے لیتے رہیں اور عوام کی زندگی عذاب بنی رہے۔ حکومت فی الفور کالا باغ اوردیگر ڈیموں کی تعمیر کا اعلان کرے۔ اس موقع پر موجود المصطفٰی کے رہنماؤں نے بتایا کہ المصطٰفی کے مصطفائی مدگار ماضی کی طرح اس مرتبہ بھی سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں مدد کیلئے پہنچ چکے ہیں اور متاثرین سیلاب کی پر ممکن مدد کریں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1