حلقہ پی پی 100 میں ضمنی انتخابات ووٹوں کی گنتی مکمل،غیر حتمی نتیجہ آ گیا،ن لیگ نے ایک بار پھر میدان مار لیا

حلقہ پی پی 100 میں ضمنی انتخابات ووٹوں کی گنتی مکمل،غیر حتمی نتیجہ آ گیا،ن ...
 حلقہ پی پی 100 میں ضمنی انتخابات ووٹوں کی گنتی مکمل،غیر حتمی نتیجہ آ گیا،ن لیگ نے ایک بار پھر میدان مار لیا

  

گوجرانوالہ (مانیٹرنگ ڈیسک )صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی پی 100 کامونکی کے ضمنی الیکشن کیلئے پولنگ میں ووٹوں کی گنتی کا عمل مکمل ہو گیاہے اور غیر حتمی نیتجہ کے مطابق ن لیگ کے امیدوار چوہدری اختر خان نے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار احسان ورک کو شکست دے دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی پی 100کے ضمنی انتخاب میں غیر حتمی نتیجہ آ گیاہے جس کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کے امیدوار چوہدری اختر نے 49ہزار 991ووٹ حاصل کر کے کامیاب ہو گئے ہیں جبکہ پی ٹی آئی کے امید وار نے او28140ووٹ حاصل کیے ۔

پولنگ کے عمل کے  دوران  کشیدگی کی وجہ سے انتہائی سخت سیکیورٹی انتظامات کیے گئے ہیں ،بعض مقامات پر نقص امن کے خدشے کے پیش نظررینجرز کے دستے بھی تعینات کیے گئے ہیں تاہم اس کے باوجود درگاہ پورپولنگ سٹیشن پر ن لیگ اور پی ٹی آئی کارکنان میں تصادم ہوگیا جس پر کچھ دیر کیلئے پولنگ معطل ہوگئی تاہم پولیس کی بھاری نفری تعینات کرکے دوبارہ پولنگ شروع کردی گئی ۔ الیکشن میں ن لیگ اور پی ٹی آئی کے درمیان کانٹے دار مقابلہ ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق ن لیگ نے مقتول ایم پی اے رانا شمشاد احمد خان کے بھائی چودھری اختر علی خان جبکہ تحریک انصاف نے احسان ورک کو اپنا امیدوار نامزد کیا ہے۔ حلقہ پی پی 100 میں کامونکی شہرکی آٹھ اور دیہات کی پانچ یونین کونسل شامل ہیں۔ رجسٹرڈ ووٹوں کی تعداد ایک لاکھ 62 ہزار 444 ہے جن میں سے مرد ووٹر 95 ہزار 750 اور زنانہ ووٹرز 66 ہزار 694 شامل ہیں۔ الیکشن کمیشن نے 113 پولنگ سٹیشن بنائے ہیں جن میں 38 مردانہ ، 36 زنانہ اور 39 مشترکہ پولنگ سٹیشن شامل ہیں۔ 344 پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں جن میں سے 196 مردانہ اور 48 1زنانہ ہیں۔ امن و امان کی صورتحال کے پیش نظر 35 پولنگ سٹیشن حساس قرار دیئے گئے ہیں۔ کامونکی کے شہری علاقہ میں ایک لاکھ 2 ہزار جبکہ دیہی علاقہ میں ووٹرز کی تعداد 60 ہزار 444 ہے۔

سخت سیکیورٹی انتظامات کے باوجوددرگاہ پور پولنگ سٹیشن میں ن لیگ اور پی ٹی آئی کارکنان میں تصادم ہوگیا، پی ٹی آئی کارکنان نے الزام لگایاہے کہ ن لیگیوں نے اُن کے پولنگ ایجنٹ کو سٹیشن سے باہر نکال دیا جس کے بعد کچھ دیر کیلئے پولنگ روک دی گئی تاہم پولیس کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی جس کے بعد کشیدہ صورتحال میں ہی دوبارہ پولنگ شروع کردی گئی ۔

یادرہے کہ 2013 ءکے عام انتخابات میں مسلم لیگ (ن) کے امیدوار چودھری شمشاد احمد خان نے 54 ہزار ایک سو اٹھارہ ووٹ حاصل کئے تھے۔ پی ٹی آئی کے یاسر رامے 14 ہزار 618 ووٹ حاصل کرسکے تھے۔ حکام نے بتایا کہ جس پارٹی کے کارکن نے بھی قانون کو ہاتھ میں لیا اس کے ساتھ سختی سے نمٹا جائے گا۔

مزید : گوجرانوالہ /Headlines