بھارتی سٹیٹ بینک نے غریب خاتون کو کھربوں کی مالکن بنادیالیکن کیوں؟وجہ ایسی کہ آپ حیران رہ جائیں

بھارتی سٹیٹ بینک نے غریب خاتون کو کھربوں کی مالکن بنادیالیکن کیوں؟وجہ ایسی ...
بھارتی سٹیٹ بینک نے غریب خاتون کو کھربوں کی مالکن بنادیالیکن کیوں؟وجہ ایسی کہ آپ حیران رہ جائیں

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) حیثیت سے بڑھ کر کسی خوش قسمتی یا حادثاتی طورپر زیادہ پیسہ آجانے پر عمومی طورپر انسان اپنی خوشی سنبھال نہیں پاتے اور بعض اوقات تو موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں لیکن یہ بھارتی خاتون ساڑھے نوکھرب روپے کی مالکن بن گئی اور یہ طریقہ جان بوجھ کر سٹیٹ بینک آف انڈیا نے اختیار کیا۔

بھارتی اخبار ’ہندوستان ٹائمز‘ کے مطابق کان پور کے علاقے وقاص نگر کی رہائشی ارمیلا یادیو چند دن پہلے امیر لوگوں میں سے ایک تھی اور اس کی وجہ سٹیٹ بینک آف انڈیا کا اپنے گاہکوں سے رابطے میں رہنے کا انوکھا طریقہ تھا،ارمیلا گھریلو کام کاج کرتی ہے اور دوہزار روپے سے ایک سیونگ اکاﺅنٹ کھلوایا جس کے بعد بینک کی طرف سے دومیسج موصول ہوئے ۔ پہلے میسج میں بتایاگیاکہ نولاکھ نناوے ہزار نوسوننانوے روپے جمع ہوگئے ہیں جبکہ دوسرے میسج میں بتایاگیاکہ نو لاکھ ستانوے ہزارروپے کٹ گئے ہیں ۔دوہزار روپے اکاﺅنٹ میں بچ گئے ہیں ۔

خاتون نے بتایاکہ وہ حیران رہ گئی کہ ایسی کوئی رقم نکلوائی ہی نہیں ، حیران تھی کہ دس لاکھ کیسے آیا اور پھر چلاگیا جس کے بعد ایک اور اکاﺅنٹ ہولڈر لتلاپرسادتواری کیساتھ بینک پہنچی تو وہاں اکاﺅنٹ چیک کیاگیا۔ کہانی ابھی ختم نہیں ہوئی تھی ، اب سامنے آنیوالے اعدادوشمار سے دل کا دورہ بھی پڑسکتاتھاجی ہاں نوکھرب پانچ ارب اکہتر کروڑسولہ لاکھ اٹھانوے ہزار چھ سو سینتالیس روپے اکاﺅنٹ میں موجود تھے جس پربینک کا عملہ بھی حیران رہ گیا۔

بینک منیجر وی کے سری واستوا نے بتایاکہ یہ ملازمین کا اپنے صارفین کیساتھ رابطے میں رہنے کاایک طریقہ ہے ، اکاﺅنٹ بند ہونے سے بچانے کیلئے بھاری رقم اکاﺅنت میں منتقل کی جاتی ہے اور پھر واپس نکال لی جاتی ہے ۔

ارمیلاکاکہناتھاکہ وہ کسی عدالتی بکھیڑے میں نہیں پڑنا چاہتی وہ صرف اتنا چاہتی ہے کہ اس کے اکاو¿نٹ اپنی رقم واپس آجائے ، جو پیسہ جمع کرایاگیا وہ محفوظ رہے ۔

مزید : بزنس