برآمدات بڑھانے کیلئے صنعتوں کو سہولیات فراہم کی جائیں ‘ راجہ حسن اختر

برآمدات بڑھانے کیلئے صنعتوں کو سہولیات فراہم کی جائیں ‘ راجہ حسن اختر

لاہور ( این این آئی)لاہور چیمبر (بزنس مین فرنٹ گروپ) کے صدرایف پی سی سی آئی ریجنل قائمہ کمیٹی برائے’’کان کنی و معدنیات‘‘ کے چےئرمین راجہ حسن اختر نے کہاہے کہ پاکستان کی برآمدات گزشتہ 6 سال کی کم ترین سطح پر پہنچ گئی ہے ،حکومت کو ایکسپورٹ میں اضافے کیلئے مقامی انڈسٹری کو سہولیات فراہم کرنا ہو گئی۔انہوں نے کہاکہ برآمدات گزشتہ مالی سال کے دوران 1.6 فیصدکم ہو کر 20.44 ارب ڈالر ہو گئیں اور مجموعی طور پر 339 ملین ڈالر کی کمی دیکھنے میں آئی ۔یہ اعدادوشمار گزشتہ مالی سال کے لئے حکومت کی جانب سے مقرر کردہ 24.8 ارب ڈالر کے سرکاری ہدف سے 4.3 ارب ڈالر کم تھا ۔راجہ حسن نے مزید کہاکہ پاکستان بیورو آف سٹیٹکس کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ مالی سال 2016-17 میں 32.6 ارب ڈالر کا تجارتی خسارہ ریکارڈ کیا گیا اور درآمدات میں 36.3 فیصد اضافہ ہوا جس سے درآمدات 53ارب ڈالر بلند ترین تاریخی سطح پر پہنچ گئیں۔ تجارتی خسارہ حکومت کی جانب سے مقرر کردہ ہدف سے 12 ارب ڈالر زیادہ تھا۔ حکومت کی جانب سے ٹیکسٹائل پیکج دینے کے باوجود ٹیکسٹائل کا شعبہ مسلسل زوال کا شکار ہے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کی برآمدات یورپی ممالک سمیت امریکہ ،چین، جاپان، سعودی عرب، متحدہ عرب اعمارت ، سری لنکا، بنگلہ دیش، ساوتھ افریکہ و دیگر ممالک سے گزشتہ سالوں کے مقابلے میں کافی حد تک کم ہوئی ہیں۔ حکومت صنعت و تجارت کے شعبہ میں بری طرح ناکام ہو چکی ہے۔

اور یہ حکومت کا لگا تار چوتھا سال ہے کہ وہ اپنے مقرر کردہ تجارتی اہداف کو حاصل کرنے سے قاصر ہے با وجود اس کے ملک بھر کے برآمد کنندگان کو یورپی یونین میں برآمدات میں ٹیکس ڈیوٹی سے استثنیٰ بھی حاصل ہے۔

*****

مزید : کامرس