سرینگر مظفرآباد تجارت ایک ہفتہ کیلئے معطل کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری

سرینگر مظفرآباد تجارت ایک ہفتہ کیلئے معطل کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری

چناری (آن لائن)سرینگر مظفرآباد دو طرفہ تجارت کا مال لیکر مقبوضہ کشمیر جانے والے ٹرک ڈرائیور کی منشیات سمگلنگ الزام میں گرفتاری کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال کے پیش نظر تاجروں کے بعد ٹریول اینڈ ٹریڈ اتھارٹی آزاد کشمیر نے بھی معاملہ کی تحقیقات کی غرض سے سرینگر مظفرآباد تجارت ایک ہفتہ کے لئیے معطل کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا چکوٹھی ٹریڈ سینٹر پر منگل کے روز تجارت نہ ہو نے کی وجہ سے مکمل سناٹا چھایا رہا چار روز گذرنے کے بعد بھی بھارتی حکام منشیات برآمدگی کے ثبوت آزاد کشمیر حکام کے حوالے نہ کر سکے۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ ہفتے جمعہ کے روز آزاد کشمیر سے کپڑا لے کر مقبوضہ کشمیر جانے والے مال بردار ٹرک سے 66.5کلو ہیروئن برآمد کر نے کا بھارت نے دعوی کرتے ہوئے ٹرک کو ضبط کرتے ہوئے ٹرک ڈرائیور کو گرفتار کر لیا تھا جس کے بعد بھارتی حکام نے ایل او سی پر ہونے والی میٹنگ میں آزاد کشمیر حکام کو یقین دہانی کروائی تھی کہ وہ پیر کے روز تک منشیات برآمدگی کے جملہ ثبوت آزاد کشمیر حکام کے حوالے کریں گے تاحال بھارت کی جانب سے کوئی بھی ثبوت فراہم نہ کر نے کی وجہ سے آزاد کشمیر میں کوئی بھی کارروائی عمل میں نہ لائی جا سکی ٹریڈ سینٹر چکوٹھی کے انچارج ٹی ایف او میجر(ر) طاہر کاظمی نے صحافیوں کو بتایا کہ منشیات برآمدگی کے بھارتی الزام کے بعد پیدا ہو نے والی صورتحال کے پیش نظر ایک ہفتہ کے لئے سرینگر مظفرآباد تجارت کو معطل کیا گیا ہے۔

تانکہ اس معاملہ کی تحقیقات مکمل کر کے اصل حقائق سامنے لائے جا سکیں بھارتی حکام نے اپنے وعدے کے مطابق تاحال ہمیں کسی بھی قسم کے ثبوت فراہم نہیں کیے جس وجہ سے تحقیقاتی عمل میں مشکل پیش آرہی ہے یاد رہے کہ دو طرفہ تجارت کی معطلی کے باعث دونوں اطراف کے تاجروں کے کرڑوروں روپے آر پار پھنس گئے ہیں جس وجہ سے تاجر شدید مشکلات اور پریشانیوں کا شکار ہیں انٹرا کشمیر ٹریڈ یونین چکوٹھی کراسنگ پوائنٹ نے اس معاملہ کی اعلی سطحی تحقیقات ،چکوٹھی ٹریڈ سینٹر پرجدید وہیکل سکینر نصب کرنے ،آزاد کشمیر کے تین بے گناہ ڈرائیوروں کی مقبوضہ کشمیر سے فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت پاکستان باالخصوص وزارت خارجہ اپنا فوری کردار ادا کرتے ہوئے بے گناہ ڈرائیوروں کی فوری رہائی کے لئیے اپنا کردار ادا کرے دریں اثناء لائن آف کنٹرول پر ہو نے والی گولہ باری کے باعث تیتری نوٹ چکاں دا باغ کراسنگ پوائنٹ سے تیسرے ہفتے بھی تجارت بحال نہ ہو سکی دونوں کراسنگ پوائنٹ سے تجارت کی معطلی کے بعد دو طرفہ تجارت سے منسلک تمام لوگ شدید مشکلات اور پریشانیوں کا شکار ہو گئے ہیں

مزید : کامرس