نان کسٹم پیڈ لگژری گاڑیوں کی غیر قانونی رجسٹریشن، لاکھوں روپے ٹیکس خوردبرد کا انکشاف

نان کسٹم پیڈ لگژری گاڑیوں کی غیر قانونی رجسٹریشن، لاکھوں روپے ٹیکس خوردبرد ...

لاہور(ارشد محمود گھمن /سپیشل رپورٹر) ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن مو ٹر ر جسٹر یشن اتھا رٹی لا ہور فر ید کو ٹ ہاؤس میں کرو ڑو ں روپے ما لیت کی نا ن کسٹم پیڈ لگژری گاڑیوں کو مبینہ طور پرپرانی تاریخوں میں ر جسٹر ڈ کر نے اورپرائیویٹ اورکمرشل گاڑیوں کا لاکھوں روپے ٹوکن ٹیکس خوردبرد کرنے کا انکشاف ہوا ہے جس میں ای ٹی اوز ،نعیم ،اسلم اورعدیل وغیرہ اور ما تحت عملہ کا ملو ث پا ئے جا نے کا امکان ہے ۔ذرائع نے بتایا ہے کہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن موٹر رجسٹریشن برانچ لاہور میں انسپکٹرز ،کلرکس اور ای ٹی اوز عدیل وغیرہ کی مبینہ ملی بھگت سے پرائیویٹ اورکمرشل گاڑیوں کے ٹوکن ٹیکس کی آڑ میں لاکھوں روپے کا قومی خزانے کو ٹیکہ لگایا ہے۔اس ضمن میں گاڑی مالکان کے ٹوکن کی جعلی رسید کے ذریعے لاکھوں روپے حاصل کررکھے ہیں جبکہ اس کا کمپیوٹرائزڈ ریکارڈ نہ ہونے کی وجہ سے سائلین گاڑی مالکان دوبارہ ٹوکن لینے پر مجبور ہیں ۔اس حوالے سے ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن مو ٹر ر جسٹر یشن اتھا رٹی نے اس میں ملوث متعددڈیٹا انٹری آپریٹر زاورکلرکس سمیت دیگر عملہ کو معطل کرکے مبینہ طو ر پر ذمہ دا ر افسروں کو بچا لیا ہے جبکہ اینٹی کرپشن نے ملوث ملزمان کے خلاف انکوائری فائنل کرکے چالان عدالت بھجوا دیئے ہیں۔واضح رہے کہ ڈائریکٹر جنرل ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن اکرم اشرف گوندل نے ریجن سی موٹر برانچ میں نان کسٹم پیڈ گاڑیاں پچھلی تاریخوں میں رجسٹرڈ کرنے پر متعددڈیٹا انٹری آپریٹر زاورکلرکس سمیت دیگر عملہ کے افراد کو معطل کر دیا تھا۔ ذرا ئع کے مطا بق ڈائر یکٹر اور ای اٹی او سمیت عملہ ملو ث تھا جسے بچا نے کیلئے مبینہ طو ر پراکرم اشر ف گو ند ل نے سارا ملبہ ڈ یٹا انٹر ی آپر یٹر پر ڈا لتے ہو ئے ذمہ دا ر افسرا ن کو بچا نے کی خا طر معطل کر کے کا رروا ئی کا ر خ تبد یل کردیا ہے تا کہ بڑ ے بڑے نا ن کسٹم پیڈ گا ڑیا ں ر کھنے والے سر ما یہ دا ر وں کہ نا م سامنے نہ آسکیں جن سے مبینہ طو ر پر لا کھو ں رو پے ر شوت وصو ل کر کے پچھلی تا ریخوں میں گا ڑیو ں کی ر جسٹر یشن کی گئی تھی۔ ذرا ئع کے مطا بق آپر یٹر زا ہد حسین وغیرہ کونشانہ بنا کر اعلی حکام کی انکھوں میں د ھو ل جھو نک دی گئی ہے تا کہ ر یکا رڈ کی جا نچ پڑتا ل سے بڑ ے بڑے افسرا ن کے نا م سامنے نہ آسکیں۔ اس حوالے سے ڈائریکٹر ریجن سی محمد آصف کا کہنا ہے کہ کرپٹ افسروں کے خلاف گھیرا تنگ کردیا گیا ہے اور دونمبر کام کرنے والوں کے خلاف بھرپور ایکشن لیا جارہا ہے۔

مزید : صفحہ آخر