تعلیم کسی کی میراث نہیں،15گھنٹے رکشہ چلا کر بچوں کو پڑھا رہا ہوں،محمد علی نقوی

تعلیم کسی کی میراث نہیں،15گھنٹے رکشہ چلا کر بچوں کو پڑھا رہا ہوں،محمد علی نقوی

ملتان(سٹاف رپورٹر)تعلیمی بورڈ ملتان کے زیر اہتمام ہونے والے میٹرک کے امتحان میں آرٹس گروپ میں دوسرے نمبر پر آنیوالی (بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

طالبہ ایشاعلی کے والدرکشہ ڈرائیور سید محمد علی نقوی کاکہنا ہے کہ میں غریب ہوں تو کیا ہے ۔میرے حوصلے تو بلند ہیں ۔بچوں کو بہتر سے بہتر تعلیم دلوانے کے لئے دن رات ایک کر رکھا ہے۔ تعلیم کسی کی میراث نہیں، 15گھنٹے رکشہ چلا کر بچوں کو پڑھا رہا ہوں، میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے علی نقوی کا کہنا تھا کہ تعلیم کے بغیرغیر کوئی زندگی نہیں ، سب لوگوں کو اپنے بچوں کو پڑھا نا چاہیے، ان کے روشن مستقبل کیلئے ان کو علم دینا ہوگا، بیٹیوں کو بہترمستقل دینے کیلئے 15گھنٹے رکشہ چلاتا ہوں لیکن یقین تھا اور یہ محنت کام آگئی۔ سب لوگوں کو اس سے نصیحت لینا چاہیے،تاکہ بیٹیوں کے مستقبل کو محفوظ بنایا جاسکے ۔اس موقع پر ایشا کا کہنا تھا کہ وہ مستقبل میں مذہبی سکالر بننا چاہتی ہے ۔والد کی محنت کا احساس ہے ۔اس لئے پڑھائی میں کبھی کوتاہی نہیں کی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر