تاجروں کا آگ لگوانے والے دکاندار ‘ انشورنس کمپنی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

تاجروں کا آگ لگوانے والے دکاندار ‘ انشورنس کمپنی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

ملتان(جنرل رپورٹر‘ کرائم رپورٹر)انجمن تاجران حضوری باغ روڈ کے زیر اہتمام انشورنس کی رقم حاصل کرنے کے لئے آگ لگوانے والے دکاندار اور انشورنس کمپنی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا مظاہرے کی قیادت انجمن تاجران جنوبی پنجاب کے جنرل سیکرٹری زین العابدین موتی والے (بقیہ نمبر16صفحہ12پر )

اور صدر حضوری باغ روڈ ملک اکرم سگو نے کی ۔ مظاہرین نے کہا کہ تھری ڈی سنٹر کے مالک محمد علی نے شاہین انشورنس کمپنی کے ساتھ مل کر تخریب کاری کی جس کی وجہ سے پلازہ میں موجود دیگر دکانوں کے تاجروں کا لاکھوں روپے کا نقصان ہوا ہے اور کاروبار بھی متاثر ہوا ہے ۔ پولیس انتظامیہ مذکورہ تخریب کار محمد علی اور انشورنس کمپنی کے خلاف فی الفور کارروائی کرکے ہمارے نقصان کا ازالہ کرے۔ اس موقع پر انجمن تاجران لوہاری گیٹ کے صدر فہد اسحاق سانگی‘ ناصر بلوچ‘ فہد احمد‘ محمد شکیل ودیگر بھی موجود تھے۔ گزشتہ سے پیوستہ شب حضوری باغ روڈ پر واقع زین العابدین پلازہ میں محمد علی کی ا لیکٹرونکس کی دکان میں آگ بھڑک اُٹھی اسی دوران الیکٹرونکس کا سامان دھماکے سے پھٹتا رہا۔جس سے دیگر دکانوں کو بھی نقصان پہنچا،اطلاع ملنے پر ریسکیو فائر برگیڈ ،سول ڈیفنس اور پولیس موقع پر پہنچ گئے اور آگ پر قابو پالیا۔ پلازہ کے دیگر تاجروں نے پولیس کو واقع کی تفتیش کی درخواست کی،کوتوالی پولیس نے محمد علی سے مکمل تفتیش کی،اس دوران اس کے بیانات میں تضاد آتا رہا،بلا آخر ملزم نے اعتراف کر لیا کہ اس نے آگ خود لگائی ہے۔محمد علی کا کہنا تھا کہ اس نے نجی انشورنس کمپنی دے الیکٹرونکس کے سامان کی انشورنس کروائی تھی،اس نے کمپنی کے ملازمین سے ملی بھگت کی اور معاہدہ کیا کہ دکان میں کر ڈیڑھ کروڑ روپے انشورنس کلیم کیا جائے گا،اور وہی ملازمین اسے پیسے دلوانے میں کردار ادا کریں گے،کلیم کی رقم آدھی آدھی کی جائے گی۔اس نے دکان میں پرانی الیکٹرونکس کی اشیا ء رکھ کر آگ لگا دی جس سے وقفے وقفے سے سامان دھماکے سے پھٹتا رہا۔پولیس نے محمد علی سمیت انشورنس کمپنی کے ملازمین کے خلاف مقدمہ درج کرکے کاروائی شروع کردی ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر