جہانگیرہ: زخمی نوجوان ہسپتال میں جان کی بازی ہار گیا

جہانگیرہ: زخمی نوجوان ہسپتال میں جان کی بازی ہار گیا

شیدو(نمائندہ پاکستان)جہانگیرہ۔ زخمی نوجوان ہسپتال میں جان کی بازی ہار گیا۔ تفصیلات کے مطابق چند ہفتہ قبل نودیہہ جہانگیرہ کی مقامی ماربل فیکٹری میں دو مزدوروں محمد وقاص ولد شیر حسن مرحوم اور شہنشاہ ولد شاہد کی آپس میں معمولی تکرار ہوئی جس پر شہنشاہ ولد شاہد نے وقاص کے سر پر ہتھوڑے سے وار کرڈالے جس کے نتیجے میں وقاص کے سر کی ہڈی مختلف جگہوں سے ٹوٹ گئی اور دماغ ؂بھی زحمی ہوگیا جن کو انتہائی تشویشناک حالت میں پہلے نوشہرہ DHQ اور پھر LRH پشاور ریفر کردیا گیا جہاں پر اس کا آپریشن کیا گیا مگر حالت سنبھل نہ سکی اور چند ہفتے موت اور زندگی کی کشکمکش میں رہنے کے بعد پیر کی صبح کو زندگی کی بازی ہار گیاجن نودیہہ کے مقامی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا ۔ یاد رہے کہ وقاص یتیم تھے جس کی بڑے بھائی ذہنی معذور ہیں اور وہ اپنے یتیم بہن بھائیوں کا واحد کفیل تھا اور نہایت غربت کی زندگی گزار رہے تھے۔ ملزم شہنشاہ ولد شاہد کو واردات کے وقت موقع پر موجود نوجوانوں نے پکڑ کر کمرے میں بند کردیا تھا اور بعد ازاں اکوڑہ پولیس کے حوالے کردیا تھا۔ نودیہہ جہانگیرہ کے عوام نے ملزم شہنشاہ کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے اور سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا۔

 

مزید : پشاورصفحہ آخر