بونیر ،ناروا لوڈشیڈنگ سے ماربل انڈسٹری تباہی کے دہانے پر

بونیر ،ناروا لوڈشیڈنگ سے ماربل انڈسٹری تباہی کے دہانے پر

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر)حکومت کو کروڑوں روپے بجلی بل دینے ،لاکھوں روپے رائلٹی دینے ولا ماربل انڈسٹری بجلی کی کم وولٹیج ۔ناروااور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ اور واپڈا اہلکاروں کی نامناسب رویہ کی وجہ سے تباہی کے دہانے پر کھڑی ہے ۔ایس ڈی او واپڈ ون کو اگر جلد از جلد تبدیل نہ کیا گیا تو یکم اگست سے بونیر کے سینکڑوں ماربل کارخانے بند کریں گے ۔جس سے لاکھوں مزدور بے روزگار ہو جائیں گے ۔ان خیالات کااظہار ماربل ایسوسی ایشن کے صدر مراد خان ۔گل روز خان ۔ضیاء الرحمان ۔برکت علی باچا ۔حاجی خوشی خان ۔رشد اقبال اور دیگر عہدیداروں نے ایس ای پیسکو اور ایکسئن پیسکو سے ملاقات کے بعد مقامی میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا ۔صدر مراد خان نے کہا کہ بونیر میں تین سو سے زیادہ ماربل کارخانے ہے جس میں ہزاروں مزدوروں کے علاقہ لاکھوں عوام کا رزق وابستہ ہے ۔ہر ماہ پیسکو کو بجلی بلز کی صورت میں کروڑوں روپے اداکرتے ہے ۔جبکہ رائلٹی کی صورت میں لاکھوں روپے ٹیکس دیتے ہے۔مگر بونیر میں بجلی کی کم وولٹیج اور ناروالوڈ شیڈنگ کی وجہ سے یہی ماربل کارخانے بند ہو نے کے قریب ہے ۔انہوں نے کہا کہ بونیر میں واپڈا اہلکاروں خصوصا ایس ڈی او ڈگر ون کے نامناسب رویہ کی وجہ سے ماربل فیکٹری مالکان تنگ اچکے ہے ۔اگر جلد از جلد ایس ڈی او کو تبدیل نہ کیا گیا تو یک اگست سے ہم ماربل کارخانوں کو تالے لگادیں گے ۔مراد خان نے مزید کہا کہ بونیر میں ماربل واحد انڈسٹری ہے ۔جنہوں نے اپنی مدد اپ کے تحت لاکھوں عوا م کو روزگار مہیا کی ہے ۔پورے ملک اور خصوصا خیبر پختون خواہ کو بونیر سے ماربل سپلائی ہورہی ہے ۔مگر بدقسمتی سے اس صنعت کو تباہ کرنے اور یہاں کے عوام سے منہ کا نوالہ چھینے کی کو شیش کی جارہی ہے ۔مگر ہم پیسکو اور مرکزی حکومت کو بتانا چاہتے ہے ۔کہ بونیر کے ماربل کارخانوں کو بلا ناغہ بجلی کی سپلائی بحال کی جائے اور ہمارے جائیز مطالبات فوری طور پر تسلیم کی جائے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر