ہائیکورٹ بار ملتان کا دوسرے روز کا اجلاس بھی ہنگامہ خیز رہا، مذاکرات کے معاملہ پر وکلاء تقسیم، تلخ کلامی

ہائیکورٹ بار ملتان کا دوسرے روز کا اجلاس بھی ہنگامہ خیز رہا، مذاکرات کے ...

ملتان (خبر نگار خصوصی)ہائیکور ٹ بارایسوسی ایشن ملتان کا احتجاجی اجلاس دوسرے روزبھی ہنگامہ خیزرہااورمذاکرات کی تجاویز کو ردکرنے کے ساتھ تقاریرکے لئے وقت نہیں ملنے پراحتجاج کرنے کے ساتھ تلخ کلامی کے واقعات بھی ہوئے۔اس ضمن میں گزشتہ روزاجلاس کے دوران سابق صدرسید محمدعلی گیلانی اور سابق ڈسٹرکٹ اینڈسیشن جج سید زوارحسین شاہ کی جانب سے مذاکرات کے لئے راستہ کھلارکھنے اورکمیٹی بنانے کی تجاویز پر وکلاء نے مخالفت کردی اورکئی وکلاء حمایت ومخالفت میں بولتے رہے جبکہ اس موقع پر ذوالفقارعلی سدھونے کہایہاں سہولت کاربھی موجود ہیں لیکن ٹاؤٹوں کو برداشت نہیں کیاجائے گااحتجاج کرناہماراحق ہے اوروکلاء نے کوئی زیادتی نہیں کی ہے نیز جنرل سیکرٹری بارصاحبزادہ ندیم فرید کی جانب سے علیحدہ صوبہ اورخودمختارہائیکورٹ کی تحریک شروع کرنے پر بھی مخالفت اورحمایت کے بیانات آئے نیز انصاف لائرزفورم کے ضلعی صدرغلام مصطفی چوہان کی بھی سیکرٹری بارسے تقریر کے لئے مدعونہیں کرنے پر تلخ کلامی ہوئی نیز وکلاء اپنی تقاریرمیں عدلیہ بحالی تحریک میں کرداراداکرنے اورقربانیاں دینے کے ساتھ پاکستان بارکونسل میں جنوبی پنجاب سے کوئی ممبرنہیں ہونے پر افسوس کا اظہارکرتے رہے۔

مزید : ملتان صفحہ اول