شہباز شریف مسلم لیگ ن کے متفقہ امیدوار ہو سکتے ہیں،کوئی بھی فیصلہ چوہدری نثار کی مشاورت سے ہونا چاہیے: مجیب الرحمان شامی

شہباز شریف مسلم لیگ ن کے متفقہ امیدوار ہو سکتے ہیں،کوئی بھی فیصلہ چوہدری ...
شہباز شریف مسلم لیگ ن کے متفقہ امیدوار ہو سکتے ہیں،کوئی بھی فیصلہ چوہدری نثار کی مشاورت سے ہونا چاہیے: مجیب الرحمان شامی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر صحافی و کالم نویس مجیب الرحمان شامی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نواز شریف کی نا اہلی کی صورت میں شہباز شریف پارٹی کے متفقہ امیدوار ہو سکتے ہیں، مستقبل میں کوئی بھی فیصلہ چوہدری نثار کی مشاورت سے ہونا چاہیے۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے مجیب الرحمان شامی نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی سیاست میں شہباز شریف کا کردار بنیادی اہمیت کا حامل ہے، مسلم لیگ ن کے کچھ جذباتی کارکنوں نے ان کے حق میں بینرز لگوائے تھے لیکن انہیں کچھ زیادہ پذیرائی نہیں مل سکی ۔ پاناما کیس میں نواز شریف کی نا اہلی کی صورت میں شہباز شریف کے بطور وزیر اعظم آنے سے مسلم لیگ ن میں پھوٹ نہیں پڑے گی بلکہ وہ پارٹی کے متفقہ امیدوار ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے برسوں سے پارٹی میں اپنا کردار ادا کیا ہے اور صف اول کے قائدین میں سے ہیں، ان کے آنے سے پھوٹ بڑھے گی نہیں بلکہ ختم ہوگی ۔

وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کی ناراضی کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے مجیب الرحمان شامی کا کہنا تھا چوہدری نثار سمجھتے تھے کہ پارٹی کے اندر معاملات کو ٹھیک طریقے سے نہیں چلایا جا رہا اور جب انہوں نے اس کی نشاندہی کی تو انہیں مشاورت کے حلقے سے باہر کردیا گیا جس کی وجہ سے دل شکستگی کا عالم ہے ۔ چوہدری نثار نے نئے وزیر اعظم کے حوالے سے اپنی کوئی رائے قائم نہیں کی، ان کا شمار مسلم لیگ ن کے بانیوں میں ہوتا ہے اس لیے ان کی مشاورت سے کوئی بھی فیصلہ ہونا چاہیے۔

مزید : لاہور