سونو نگم کے بعد بھارتی اداکارہ نے اذان کے بارے میں ایسی بات کہہ دی کہ مسلمانوں کو غصے سے آگ بگولہ کر دیا

سونو نگم کے بعد بھارتی اداکارہ نے اذان کے بارے میں ایسی بات کہہ دی کہ ...
سونو نگم کے بعد بھارتی اداکارہ نے اذان کے بارے میں ایسی بات کہہ دی کہ مسلمانوں کو غصے سے آگ بگولہ کر دیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) اذان کی آواز پر پریشانی اور مغلظات بولنے والے بھارتی گلوکار سونو نگم کے بعد اب ایک اور بھارتی اداکارہ سچترا کرشنا مورتھی نے بھی زہر اگلنا شروع کر دیا ۔

”پڑھ لو “ کے مطابق چند ماہ قبل بھارتی گلوکار سونو نگم نے اذان کی آواز پر ہرزہ سرائی کی تو سوشل میڈیا پر ان کے خلاف محاز کھڑا ہو گیا اور اب سارا دن ناچ گانوں کے شور میں رہنے والی اداکارہ اور گلوکارہ سچتر ا نے بھی اذان کی آواز کو بنیاد بنا کر اپنے تعصب کا اظہار کر دیا جنہیں سوشل میڈیا پر کڑی تنقید کا سامنا ہے۔

سچترا کرشنا مورتھی نے اپنے متنازع ٹویٹ میں اذان کی آواز کو بنیاد بنا کر ہرزہ سرائی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا ہے کہ ”میں صبح چار بجے کے بعد گھر واپس آئی تو کانوں میں اذان کی آواز پڑنے لگی “۔

سچترا نے مسلمانوں کے مذہبی جذبات پر وار کرتے ہوئے مزید لکھا کہ اس طرح کی عائد کردہ مذہبیت سے زیادہ پریشان کن کوئی چیز نہیں ۔اداکارہ کے اس قسم کے بیان نے ٹویٹر پر ہنگامہ برپا کر دیا ہے اور لوگ سونو نگم کی طرح سچترا کو بھی اڑے ہاتھوں لے رہے ہیں جن کا کہنا ہے کہ بھارتی اداکاروں کو ناچ گانوں کی مخافل اور شور شرابے سے کوئی پریشانی نہیں ہوتی مگر اگر انہیں پریشانی ہے تو  اذان کی آواز سے جس سے ثابت ہوتا ہے کہ بھارتی حکومت کے بعد اب اداکاری بھی مذہب کو بنیاد بنا کر مسلمانوں کے جذبات کو مجروع کرنے کیلئے کوشاں ہیں۔

بھارتی سماج وادی پارٹی نے بھی سچترا کے بیان پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں اپنی نیند اذان کی آواز سے بھی زیادہ عزیز ہے۔

مزید : تفریح