سپریم کورٹ میں جھوٹ بولنا جرم ہے،حنیف عباسی اپنی ہی درخواست پر 7 سال کیلئے جیل جائینگے،فواد چودھری

سپریم کورٹ میں جھوٹ بولنا جرم ہے،حنیف عباسی اپنی ہی درخواست پر 7 سال کیلئے ...
سپریم کورٹ میں جھوٹ بولنا جرم ہے،حنیف عباسی اپنی ہی درخواست پر 7 سال کیلئے جیل جائینگے،فواد چودھری

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)تحریک انصاف کے رہنما فواد چودھری نے کہا ہے سپریم کورٹ کے سامنے جھوٹ بولنا جرم ہے ،حنیف عباسی اپنی ہی درخواست پر ہی کم از کم 7 سال کیلئے جیل جائینگے ،سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چودھری نے کہا حنیف عباسی کے پاس ایس ای سی پی کی دستاویزات کیسے پہنچیں،اس کا مطلب ہے دستاویزات چوری کی گئی ہیں ،ایس ای سی پی کو پی ٹی آئی کیخلاف استعمال کیا جا رہا ہے ،فواد چودھری نے کہا جہانگیر ترین کے پیسے حق حلال کے ہیں ،حلال کے پاس بچوں کو دینا جرم نہیں حرام کے پیسے بچوں کو دینا جرم ہے انہوں نے کہا جہانگیر ترین پر سرکاری خزانے میں خورد برد کا الزام نہیں ہے ،حنیف عباسی کے وکیل کو معلوم ہی نہیں کہ جہانگیر ترین پر کیا الزام لگایا گیا ہے،انہوں نے لیگی ارکان کے اقامے سامنے پر تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہاں تو وزیراعظم سمیت وفاقی وزراءعربوں کے نوکر ہے اور اقاموں پر نوکریاں کر رہے ہیں۔ان کا کہنا تھان لیگ کے وزیر اور ارکان اتنے جھوٹے اور مکار ہیں لیگی ارکان ہماری فکر چھوڑیں اپنی فکری کریں ،پوری قوم کی نظریں سپریم کورٹ پر ہیں ۔

مزید : اسلام آباد