نجم سیٹھی کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر، فریقین کو نوٹس جاری

نجم سیٹھی کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر، فریقین کو نوٹس جاری
نجم سیٹھی کیخلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر، فریقین کو نوٹس جاری

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد(آن لائن)چیئرمین پی ایس ایل نجم سیٹھی کو تین سال کیلئے پی سی بی کے بورڈ آف گورنرز کا ممبر نامزد کرنے کے خلاف اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کردی گئی،عدالت نے فریقین کو پری ایڈمیشن نوٹس جاری کردیئے۔درخواست گزار نے استدعا کی کہ چیئرمین پی سی بی کے انتخابات روک کر نجم سیٹھی کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے،پاکستان کرکٹ بورڈ اور پی ایس ایل میں مالی بے ضابطگیوں میں ملوث نجم سیٹھی اچھی شہرت کے حامل نہیں نیب اور ایف آئی اے کو حکم جاری کیا جائے کہ وہ پی سی بی اور پی ایس ایل میں ہونے والی مالی بے قاعدگیوں اور بے ضابطگیوں کی انکوائری کرے۔

تفصیلات کے مطابق  طارق اسد ایڈووکیٹ کی جانب سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں دائر درخواست میں موقف اپنایا گیا ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کی مس مینجمنٹ کے باعث کرکٹ کو نقصان پہنچ رہا ہے جس سے دنیا میں پاکستان کی جگ ہنسائی ہو رہی ہے، درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ چیرمین پی ایس ایل نجم سیٹھی اچھی شہرت کے مالک نہیں ہیں تاہم پی سی بی کے تمام معاملات وہ خود کنٹرول کر رہے ہیں،پی ایس ایل میں پاکستانی کھلاڑی سپاٹ فکسنگ میں ملوث رہے، فنڈز میں بھی خرد برد کی گئی،درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ پی سی بی اور پی ایس ایل میں ہونے والی مالی بے ضابطگیوں اور بے قاعدگیوں کی تحقیقات کیلئے نیب اور ایف آئی اے کو حکم جاری کیا جائے،۔ درخواست میں مزید استدعا کی گئی ہے کہ چیئرمین پی سی بی کو قانونی معاملات پر اٹھنے والے تمام اخراجات کی تفصیل پیش کرنے کا حکم دیا جائے،کیس کے فیصلے تک پی سی بی کے انتخابات روک کر شہریار خان کو بطور چیئرمین کام جاری رکھنے کا حکم دیا جائے۔ نجم سیٹھی کے خلاف تحقیقات کی جائیں اور نام ای سی ایل میں شامل کیا جائے۔

درخواست میں وفاق، وزیراعظم کو بطور پیٹرن انچیف پی سی بی بذریعہ پرنسپل سیکرٹری ، چیئرمین پی سی بی، نجم سیٹھی اور دیگر کو فریق بنایا گیاہے۔اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس فریقین کو پری ایڈمیشن نوٹسزز جاری کردیئے۔

مزید : کھیل