”میں نے اپنے والدین سے سیکھا ہے کہ شادی کے لیے ہمسفر کا انتخاب کرنا ہو تو ضروری ہے کہ پہلے وہ ۔۔۔“

”میں نے اپنے والدین سے سیکھا ہے کہ شادی کے لیے ہمسفر کا انتخاب کرنا ہو تو ...
”میں نے اپنے والدین سے سیکھا ہے کہ شادی کے لیے ہمسفر کا انتخاب کرنا ہو تو ضروری ہے کہ پہلے وہ ۔۔۔“

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) ”میں نے اپنے والدین سے سیکھا ہے کہ اچھے دوست ہے اچھی میاں بیوی ثابت ہوتے ہیں “ ، یہ الفاظ بالی ووڈ اداکارہ سونم کپور کے ہیں ۔

”ایکسپریس ٹریبیون“ کے مطابق بالی ووڈ کی خوبرو اداکارہ سونم کپور نے کہا ہے کہ میں نے اپنے والدین کی شادی سے سیکھا ہے کہ اچھے دوست ہی اچھے میاں بیوی ثابت ہوتے ہیں ۔”میں نے ہمیشہ انہیں آئیڈیل جوڑے کے طور پر فالو کیا ہے اور ان سے سیکھا ہے کہ اچھی ازدواجی زندگی کیلئے مرد اور عورت کے درمیان دوستی ہونا ضروری ہے “۔

انہوں نے کہا کہ اس سے بڑی بات یہ ہے کہ میں یہ جان چکی ہوں شادی اتنی ضروری نہیں ہے جتنی کامیاب شادی ضروری ہے ۔”میرے والد اور والدہ بہت دھیمے مزاج کے انسان ہیں جن کے مابین بہت مطابقت ہے “۔ سونم کپور نے اپنے والد انیل اور والدہ سنیتا کپور کی تعریفیں کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ہمیں ہماری مرضی سے راستے منتخب کرنے کی آزادی دی ۔”درحقیقت وہ ایک شادی شدہ جوڑے کی شکل میں میرے لیے رول ماڈلز ہیں “۔

دلہن کی وضاحت کرنے کے سوال پر اداکارہ نے کہا کہ ایک خوش و خرم دلہن ہی بہترین دلہن ہے کیونکہ میرا ماننا ہے کہ جو اپنی نئی زندگی کی شروعات کرنے پر خوش اور پرجوش ہو وہی خاتون اچھی بیوی ثابت ہو سکتی ہے۔

مزید : تفریح