ملک کے حالات کشیدہ ہیں ججز سے گذارش ہے پانامہ کیس کا فیصلہ جلدی سنائیں: عمران خان

ملک کے حالات کشیدہ ہیں ججز سے گذارش ہے پانامہ کیس کا فیصلہ جلدی سنائیں: عمران ...
ملک کے حالات کشیدہ ہیں ججز سے گذارش ہے پانامہ کیس کا فیصلہ جلدی سنائیں: عمران خان

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پانامہ کیس کی وجہ سے ملک رکا ہے، ملک میں حالات کشید ہ ہیں، معیشت تباہ ہو رہی ہے ملک کو اس وقت ایک چیف ایگزیکٹیو کی ضرورت ہے اور وہ یہاں پر ہے نہیں اس لئے سپریم کورٹ کے ججز سے گذارش ہے کہ پانامہ کیس کا فیصلہ جلدی سنائیں ۔سندھ کی اسمبلی وزیر اعظم سے استعفیٰ مانگ رہی ہے جبکہ خیبر پختونخواہ میں بھی بہت جلد ہی استعفیٰ کا قرارداد منظور کر لی گی یہی نہیں وکلاء، سول سوسائٹی اور ساری قوم وزیر اعظم سے استعفیٰ مانگ رہی ہے ۔سارے حکومتی وزرا وزیر اعظم کی کرپشن کو چھپانے کے لئے تگ و دو کر رہے ہیں جبکہ حکومت لوگوں کی زبانیں بند کرنے کے لئے ان کی قیمتیں لگا رہی ہے۔لاہورمیں دھماکاہوااوروزیراعظم مالدیپ چلے گئے اور یہ دعوت بھی انہوں نے خود ہی منگوائی ہے کوئی بھی نواز شریف کو بلا نہیں رہا کیوں کہ سب کو معلوم ہے کہ وزیراعظم کیخلاف کریمنل انویسٹی گیشن جاری ہے انہیں اپنے ملک وہ نہیں بلا رہے جبکہ کئی ممالک نے وزیراعظم نوازشریف کو دورے کی دعوت دے کر منسوخ کردی ۔

اسلام آباد میں میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا تھا کہ 30 سال سے یہ حکمران معصوم لوگوں کوبےوقوف بناتے رہے ہیں۔یہ معصوم اور مظلوم شکلیں بنا کر لوگوں کو پاگل بنانے کی کوششیں کر رہے ہیں جبکہ صحافیوں اور میڈیا ہاﺅسز کو بھی خریدنے کی کوششیں کر رہے ہیں۔ایک کھلاڑی 60 لاکھ روپے کافلیٹ لیتا ہے اس کامقابلہ چوری کے پیساباہربھیجنے والے سے کرایا جارہا ہے۔میرا اور نواز شریف کا کیس کسی بھی صورت میں یکساں نہیں ہے، میں نے کاﺅنٹی کھیل کر لندن میں فلیٹ لیا، تمام کھلاڑی ہی ایسا کرتے ہیں میں اپنا سارا پیسا پاکستان لایا ہوں مگر وزیر اعظم نے پاکستانیوں کے ٹیکس کے پیسے کو چوری کرکے بیرون ملک بھیجا ہے۔میں نے فلیٹ سے متعلق بینکنگ ٹرانزیکشنز جو ناممکن تھیں ،وہ دکھادیںجبکہ انہوں نے عدالت میں ابھی تک ایک بینک ٹرانزیکشن نہیں دکھائی۔ اسحاق ڈار ایک چھوٹے سے موٹر سائیکل پر سفر کرتے تھے اب دبئی میں اربوں کی جائیداد بنا لی ہے۔مسلم لیگ (ن) کے سارے وزراءکرپٹ ہیں جبکہ حکمران جماعت کا ایک وزیر اپنی کرپشن چھپانے کے لئے دین کے پیچھے چھپ رہا ہے۔یہ سارے کرپشن کے بادشاہ ہیں ان کے اوپر ایک گارڈ فادر بیٹھا ہوا ہے جبکہ ان کے نیچے دیگر کریمنل انٹر پرائزہیں۔ ضمیر فروش صحافی ان کے اقدامات کا دفاع کر رہے ہیں میرے ضمیر کی قیمت انہوں نے 2ارب روپے لگائی اب خود سوچیں دیگر اداروں اور افراد کی یہ لوگ کیا قیمت لگائیں گے ، موٹو گینگ کی تحریک انصاف پر الزام لگا لگا کر نسیں پھٹ رہی ہیں۔

پاکستانی دفاعی صنعت بھارت سے بہتر ہے ،بھارتی نائب آرمی چیف کا اعتراف

پاکستان پیپلز پارٹی کے حوالے سے پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا تھا کہ اس وقت پیپلز پارٹی اچھا کام کر رہی ہے انہوں نے فرینڈلی اپوزیشن کو چھوڑ کر ہمارے پیچھے کھڑے ہوئے ہیں کوئی بھی سیدھے راستے پر آجائے تو اس کی حمایت کرنی چاہئے۔

مزید : قومی /اہم خبریں