سرچ کمیٹی کی سفارش پر ڈاکٹر جاوید اکرم یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسزکے وی سی مقرر

سرچ کمیٹی کی سفارش پر ڈاکٹر جاوید اکرم یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسزکے وی سی ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی )چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثار کو میڈیکل یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز کے تقرر اور ہسپتالوں کی حالت زار کے کیس میں حکومت کی طرف سے آگاہ کیا گیا ہے ،سرچ کمیٹی کی سفارش پر ڈاکٹر جاوید اکرم کویونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کا وائس چانسلر مقرر کردیا گیا ہے ۔دوران سماعت چیف جسٹس نے کہا کہ سپریم کورٹ کی ہدایت کے بعد پہلی مرتبہ ہوا ہے کہ ملک بھر کے ہسپتالوں میں ادویات موجودہیں۔اس موقع پر عدالت میں موجود یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے نئے وائس چانسلر ڈاکٹر جاوید اکرم نے کہا کہ میرٹ پر تعیناتی پر شکرگزارہوں،سپریم کورٹ کے حکم پر تعیناتی کا عمل مکمل ہوا ہے اور میں نئی ذمہ داریوں کے حوالے سے اعتماد پر پورا اتروں گا،سپریم کورٹ کے حکم سے میرٹ کی بالادستی ہوئی ہے۔چیف جسٹس نے خوشگوار موڈ میں کہا کہ ڈاکٹرز کے لئے بڑی خوشخبری ہے، ان کی تنخواہوں کے معاملے کو حل کرنے کے لئے پے کمیشن قائم کر دیا گیاہے۔کنٹریکٹ ڈاکٹرزکو مستقل کرنے کا حکم بھی جاری کیا جا چکا ہے۔چیف جسٹس نے عدالت میں موجود ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے سیکرٹری ڈاکٹر سلمان کاظمی کو مخاطب کرکے ریمارکس دیئے کہ نئی ادویات سازکمپنیاں رجسٹریشن کے لئے اپلائی کریں گی تو ان کا معاملہ بھی دیکھیں گے جس پر ڈاکٹر سلمان کاظمی نے کہا کہ ہم سپریم کورٹ کے احکامات پر آپ کے بڑے ممنون ہیں ۔انہوں نے سپریم کورٹ کے احکامات کے نتیجے میں ہسپتالوں میں واٹر فلٹریشن پلانٹ نصب ہونے پر بھی چیف جسٹس کا شکریہ ادا کیا۔دریں اثناء چیف جسٹس نے محکمہ بہبود آبادی کے کٹریکٹ ملازمین کو مستقل نہ کرنے کے خلاف دائر درخواست پرحکومت پنجاب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیاہے جبکہ وفاقی وزارت اطلاعات کے ادارے اقبال اکیڈمی کے ملازمین کی پنشن کی عدم ادائیگیوں کے معاملے پر وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کردیئے ہیں۔درخواست گزار سید شوکت علی کی طرف سے عدالت کو بتایا گیا کہ اقبال اکیڈمی کے سابق ریٹائرڈ ملازمین کی 2ماہ سے پنشن روک دی گئی ہے جس کے باعث سخت پریشانی کا سامنا ہے ۔

وی سی مقرر

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...